صوبائی وزیر انسانی حقوق اعجاز عالم آگسٹین کی نمائندگان خواجہ سراءسے ملاقات

 ملاقات میں صوبہ بھر میں خواجہ سراءکمیونٹی کو درپیش مسائل بارے تفصیلی گفتگو 

 صوبائی وزیر انسانی حقوق اعجاز عالم آگسٹین کی نمائندگان خواجہ سراءسے ملاقات

لاہور: صوبائی وزیر انسانی حقوق و اقلیتی امور اعجاز عالم آگسٹین کی نمائندگان خواجہ سراءسے انسانی حقوق کے کیمپ آفس میں ملاقات ہوئی، جس میں صوبہ بھر میں خواجہ سراءکمیونٹی کو درپیش مسائل بارے تفصیلی گفتگو ہوئی جبکہ خواجہ سراﺅں پر تشدد کی روک تھام اور صوبائی سطح پر قانون سازی پر زور دیا گیا۔خواجہ سراﺅں کے وفد میں اسد نواز چوہدری، زنایہ چوہدری اور نیلی رانا شامل تھے۔صوبائی وزیر اعجاز عالم آگسٹین نے خواجہ سراﺅں سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ تحریک انصاف کی حکومت میں انسانی حقوق بالخصوص خواجہ سراءکمیونٹی کی حفاظت یقینی بنارہے ہیں جبکہ اس حوالے سے پنجاب حکومت بہت جلد ایک بل بھی اسمبلی میں پیش کرنے جا رہی ہے۔

اعجاز عالم آگسٹین نے مزید کہاکہ آپ لوگ اپنی کمیونٹی میں سے فوکل پرسن نامزد کریں تاکہ محکمہ انسانی حقوق آپ کو بہتر طور پرتحفظ فراہم کر سکے جبکہ محکمہ انسانی حقوق کے پلیٹ فارم سے انسانی حقوق کے تحفظ کے لیے ہر کمیونٹی سے ورکنگ گروپ تشکیل دے رہے ہیں کیونکہ پنجاب حکومت کی اولین ترجیحات میں امن،مذہبی ہم آہنگی اور رواداری کو فروغ دینا شامل ہے جبکہ تحریک انصاف کی حکومت میں پاکستان بھر میں پر امن ماحول کےلئے تمام ممکنہ اقدامات کئے جا رہے ہیں تاہم اس کے لئے تمام اسٹیک ہولدرز کو ملکر ساتھ چلنا ہوگا۔انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت میں خواجہ سراءکمیونٹی سمیت تمام اسٹیک ہولڈرز کو ساتھ لیکر چل رہے ہیں تاکہ آپس میں نفرتوں کا خاتمہ یقینی بنایا جا سکے۔

خوجہ سراﺅں نے تحریک انصاف کی حکومت کی جانب سے کیے جانیوالے اقدامات کی تعریف کرتے ہوئے کہاکہ اب ہر اہم سیکٹر میں خوجہ سراﺅں کی نمائندگی یقینی بنائی جا رہی ہے اور امید ہے کہ مستقبل میں بھی تمام اسٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں لیکر پر امن معاشرے کو فروغ دیا جا سکے گا۔انہوں نے خواجہ سراءکمیونٹی کی جانب سے فوکل پرسن کے لیئے زنایہ چوہدری اور نیلی رانا کانام بھی تجویز کیا جبکہ صوبائی وزیر نے ان کو یقین دلایا کہ بہت جلد انکا نوٹیفیکیشن جاری کردیا جائے گا اور کمیونٹی کو رپیش مسائل بارے تفصیلی طور پر لکھ کر پیش کریں تاکہ محکمہ کی جانب سے مکمل تحفظ کی فراہمی یقینی بنائی جا سکے۔