صوبائی وزیر وویمن ڈویلپمنٹ آشفہ ریاض نے و ویمن ڈویلپمنٹ پالیسی 2018 کاایمپلیمنٹیشن فریم ورک لانچ کردیا

ویمن ڈویلپمنٹ پالیسی 2018 کااییمپلیمنٹیشن فریم ورک WDDکے سیکرٹری آفس میں بذریعہ آن لائن لانچ کیا گیا

صوبائی وزیر وویمن ڈویلپمنٹ آشفہ ریاض نے و ویمن ڈویلپمنٹ پالیسی 2018 کاایمپلیمنٹیشن فریم ورک لانچ کردیا

لاہور : صوبائی وزیرویمن ڈویلپمنٹ آشفہ ریاض نے وویمن   ڈویلپمنٹ پالیسی 2018 کاایمپلیمنٹیشن فریم ورک لانچ کردیا۔ وویمن ڈویلپمنٹ پالیسی 2018 کااییمپلیمنٹیشن فریم ورک WDDکے سیکرٹری آفس میں بذریعہ آن لائن لانچ کیا گیا۔ صوبائی وزیر آشفہ ریاض نے اپنے خطاب میں کہا کہ اس فریم ورک کا بنیادی مقصد خواتین کو معیاری سہولیات کی فراہمی اور  ان کے اپنے حقوق سے آگاہی سے متعلق سازگار ماحول فراہم کرنا ہے۔یہ فریم ورک سرکاری و غیرسرکاری اداروں میں خواتین کے حوالے سے صنفی امتیازی رویوں کے خاتمے میں معاون ثابت ہوگا۔ انہوں نے مزید کہا کہ وویمن ڈویلپمنٹ ایمپلیمنٹیشن فریم ورک معاشرتی،معاشی اور سیاسی سطح پرخواتین کی ترقی سے متعلق کثیرالاجہتی مقاصد، ویژن رہنما اصولوں اور پالیسی ایکشن کے بیان پر مشتمل ہے۔

آشفہ ریاض کاکہنا تھا کہ PFWسے منظم طریقے سے عورتوں کی  سیاسی خودمختاری،گورننس بیسڈ رائٹس،تعلیم،سکل ڈویلپمنٹ،صحت،غربت میں کمی،معاشی خود انحصاری و خودمختاری،خواتین پر تشدد،کلامیٹ چینج اورخواتین کی ترقی سے متعلق معاملات میں امتیازی سلوک کا خاتمہ کرنا مقصود ہے۔تمام سٹیک ہولڈراداروں اور کمیونٹی کی مشترکہ کوشش سے ہی خواتین کی فلاح و بہبود کے لیے بنائے گئے پالیسی ایمپلیمنٹیشن فریم ورک کو معاشرے میں رائج کیا جاسکتا یے۔اس موقع پر سیکرٹری وویمن ڈویلپمنٹ عنبرین رضا  محکمہ WDDکے متعلقہ افسران اور منسلک سٹیک ہولڈراداروں کے ترجمان بھی موجود تھے۔