پولیو کے خلاف مہم کیساتھ ساتھ ای پی آئی کوریج بہتر بنانے کیلئے جامع پلان تیار کیا جائے:ڈاکٹر یاسمین راشد

 چار ماہ بعد پنجاب میں انسداد پولیو مہم کا دوبارہ آغاز 20جولائی سے ہوگا  ڈپٹی کمشنرز اضلاع میں انسداد پولیوسرگرمیوں کی خود نگرانی کریں، کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی: چیف سیکرٹری

 پولیو کے خلاف مہم کیساتھ ساتھ ای پی آئی کوریج بہتر بنانے کیلئے جامع پلان تیار کیا جائے:ڈاکٹر یاسمین راشد

لاہور : کورونا وباء کے باعث چار ماہ کے تعطل کے بعد پنجاب میں انسداد پولیو مہم کا دوبارہ آغاز 20جولائی سے ہوگا۔ ابتدائی طور پر پولیو ویکسیئن کی سرگرمیاں فیصل آباد کی 44 اور اٹک کی 14یونین کونسلز میں کیس ریسپانس کے طور پر کی جائیں گی۔ انسداد پولیو مہم کے سلسلے میں انتظامات کا جائزہ لینے کیلئے ایک اہم اجلاس صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد اور چیف سیکرٹری پنجاب جواد رفیق ملک کی زیر صدارت 9۔ایکمن روڈ منعقد ہوا۔ اجلاس میں سیکرٹری پرائمری صحت کیپٹن (ر)محمد عثمان،کمشنر لاہور ڈویژن آصف بلال لودھی اور متعلقہ افسران نے شرکت کی جبکہ ڈویژنل کمشنرز، ڈپٹی کمشنرز اور ڈسٹرکٹ ہیلتھ اتھارٹی کے چیف ایگزیکٹو آفیسرز ویڈیو لنک کے ذریعے شریک ہوئے۔  

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا کہ پولیوکے خاتمے کی کوششوں میں اربن علاقوں میں زیادہ چیلنجز کا سامنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مہم میں تعطل کی وجہ سے بچوں کو پولیو وائر س کے خطرات لاحق ہیں۔ انہوں نے سیکرٹری پرائمری ہیلتھ کیپٹن (ر) محمد عثمان کو ہدایت کی کہ پولیو کے خلاف مہم کیساتھ ساتھ ای پی آئی کوریج بہتر بنانے کیلئے جامع پلان تیار کیا جائے۔ چیف سیکرٹری نے ڈپٹی کمشنرز کو ہدایت کی کہ اضلاع میں انسداد پولیو مہم کی خود نگرانی کریں اور صورتحال کا باقاعدگی سے جائزہ لیتے رہیں،کسی قسم کی کوتاہی ہر گز برداشت نہیں کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں کارکردگی کا وہ خود ماہانہ بنیادوں پر جائزہ لیا کریں گے۔

چیف سیکرٹری نے افسران کو ہدایت کی کہ صوبہ میں پولیو کیخلاف مہم میں 100فیصد کوریج کو یقینی بنایا جائے، ایک بھی کیس رپورٹ ہونے کا  مطلب مکمل ناکامی ہے۔ انہوں نے کہاکہ پولیو کے خاتمے کیلئے قومی جذبے سے کام کرنا ہوگا، متعلقہ محکمے بین الاقوامی اداروں کے تعاون سے اس موذی مرض پر قابو پانے کیلئے فعال کردار ادا کریں۔ انہوں نے لاہور، راولپنڈی،فیصل آباد، ملتان اور ڈی جی خان کے ڈپٹی کمشنرز سے انکے اضلاع میں انسداد پولیو سرگرمیوں بارے بریفنگ لی۔

سیکرٹری پرائمری ہیلتھ کیپٹن (ر) محمد عثمان نے اجلاس کو بتایا کہ 20جولائی سے فیصل آباد کی 44 اور اٹک کی 14یونین کونسلز میں انسداد پولیو مہم کیس ریسپانس کے طور پر شروع کی جائے گی جو پانچ روز جاری رہے گی۔انہوں نے کہا کہ اس مہم کے دوران58یونین کونسلوں میں مجموعی طور پر تین لاکھ 17ہزارسات سو 83بچوں کو پولیو ویکسیئن کے قطرے پلانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ17اگست سے صوبے کے دیگر اضلاع میں انسداد پولیو مہم شروع کرنے کیلئے جامع حکمت عملی تیار کر لی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ رواں سال صوبے میں اب تک پولیو کے چار کیس رپورٹ ہو چکے ہیں۔