صوبا ئی وزیر ویمن ڈویلپمنٹ آشفہ ریاض  کی کسان خواتین کے وفد سے ملاقات

اس موقع پر کسان خواتین،شعبہ زراعت میں خواتین کی ترقی کے حوالے سے کام کرنے والی این جی اوز کے نمائندگان اور محکمہ ویمن ڈویلپمنٹ کے متعلقہ افسران بھی موجود تھےحکومت پنجاب تعلیم سکل ڈویلپمنٹ اور شعور کے ذریعے بچیوں کی کم عمری کی شادیوں کی روک تھام کے لیے حد درجہ پرعزم  ہے

صوبا ئی وزیر ویمن ڈویلپمنٹ آشفہ ریاض  کی کسان خواتین کے وفد سے ملاقات

لاہور: صوبا ئی وزیر ویمن ڈویلپمنٹ آشفہ ریاض  نے اپنے دفتر میں خواتین کی معاشی و معاشرتی خودمختاری کے استحکام سے متعلق کسان خواتین کے ایک وفد سے ملاقات کی۔ اس موقع پر کسان خواتین،شعبہ زراعت میں خواتین کی ترقی کے حوالے سے کام کرنے والی این جی اوز کے نمائندگان اور محکمہ ویمن ڈویلپمنٹ کے متعلقہ افسران بھی موجود تھے۔حکومت پنجاب تعلیم سکل ڈویلپمنٹ اور شعور کے ذریعے بچیوں کی کم عمری کی شادیوں کی روک تھام کے لیے حد درجہ پرعزم  ہے۔

تعلیم اور خواتین کی خودمختاری کے پروگرامز کا  باہمی میل ہی کم عمری کی شادیوں پر قابو پانے کا کامیاب طریقہ کار ہے بچوں کی شادیوں کے خود ان بچوں بچیوں پر نفسیاتی جسمانی معاشرتی تعلیمی اور معاشی نقصانات سے متعلق پریشان کن پہلوؤں بارے پسماندہ علاقوں میں والدین اور کمیونٹی ممبرز کو محکمہ بہبود آبادی اور لٹریسی موبلائزرز مسلسل آگاہ کررہے ہیں۔ وزیر ویمن ڈویلپمنٹ آشفہ ریاض نے کہا کہ محکمہ زراعت نوجوان شادی شدہ کسان لڑکیوں کو ڈیری،فارمنگ اور دیگر زرعی شعبوں میں مالی و معلوماتی معاونت فراہم کررہا ہے۔

ہمیں چھوٹی عمرکی شادیوں کو ختم کرنے کے لیے ابھی بہت سا کام کرنا ہے اور اس کے لیے ہر قسم کے بین الاقوامی قومی صوبائی اور لوکل پلیٹ فارمز کے ذریعے عملی اقدام کرنے کی ضرورت ہیاس میں انفرادی و اجتماعی سطح پر تمام سول سوسائٹی کو مشترکہ کردار ادا کرنا ہوگا۔اس ضمن میں مذہبی و روایتی سکولرز کو کمیونٹی کے لوگوں کو بچیوں کی شادیوں کے منفی نتائج سے  متعلق تبدل زدہ سوچ کو رواج دینا ہوگا۔محکمہ ویمن ڈویلپمنٹ کا اس وقت سارا فوکس اس بات پر ہے کہ تمام معاون اداروں کے اشتراک سے خواتین کے حقوق سے متعلق قوانین پرعمدرآمد کو ہر صورت یقینی بنایا جائے۔