صوبائی وزیر انسانی حقوق اعجاز عالم آگسٹین نے فری تھیلیسیمیاء کیمپ کا افتتاح کردیا

کیمپ کا انعقاد پی سی ایس آر سوسائٹی فیز ٹو میں فینکس فاؤنڈیشن نے ریڈ کریسنٹ کے ساتھ ملکر کیا حکومت پنجاب کے پروگرام برائے تھیلیسیمیاء سے بچاؤ کی طرف سے مفت ٹیسٹ کیئے گئے

صوبائی وزیر انسانی حقوق اعجاز عالم آگسٹین نے فری تھیلیسیمیاء کیمپ کا افتتاح کردیا

لاہور: صوبائی وزیر انسانی حقوق واقلیتی امور اعجاز عالم آگسٹین نے پی سی ایس آئی آر سوسائٹی فیز ٹو،لاہور میں تھیلیسیمیا جیسے مرض میں مبتلا بچوں کے لئے خون کے  فری عطیہ کے حوالے سے منعقدہ  کیمپ کا افتتاح کردیا، کیمپ کا انعقاد فینکس فاؤنڈیشن،ر وٹری کلب لاہور ساؤتھ اور ریڈ کریسنٹ کے باہمی اشتراک سے کیا گیا تھا۔اس موقع پر ڈاکٹر نورالزمان کے ہمراہ ریڈ کریسنٹ اور سوسائٹی کے ممبران بھی موجود تھے جبکہ نوجوانوں کی بڑی تعداد نے کیمپ میں مفت ٹیسٹ کی سہولت سے فائدہ اٹھایا۔اس موقع پر میڈیا نمائندگان سے بات چیت کرتے ہوئے صوبائی وزیر اعجاز عالم آگسٹین نے کہا کہ کیمپ کا افتتاح کرتے ہوئے فخر محسوس کر رہا ہوں کہ تحریک انصاف کی حکومت محض انسانیت کی خدمت کو اپنا ایجنڈا مانتے ہوئے آگے بڑھ رہی ہے جبکہ پہلے اس ٹیسٹ کی قیمت 10ہزار روپے تھی مگر آج کے کیمپ میں حکومت پنجاب کی جانب سے عوام کے لئے بالکل فری ٹیسٹ ہوگا۔

اعجاز عالم آگسٹین نے کہاکہ وزیر بننے سے قبل بھی ڈاکٹر یاسمین راشد نے تھیلیسیمیا کے لئے بہت عمدہ کام کیا تھا اور اب بھی خصوصی توجہ دے رہی ہیں۔انہوں نے مزید کہاکہ پنجاب حکومت اپنے بچوں کی حفاظت یقینی بنانے کے لئے ایسے بے شمار اقدامات یقینی بنا رہی ہے درحقیقت کورونا جیسی وباء کے باعث کافی کام تاخیر کا شکار تھے مگر اب حکومتی ارکان انسانیت کی خدمت کو اپنا شعار بناتے ہوئے ایک نئے جذبے کے ساتھ ملکر آگے بڑھ رہے ہیں۔ صوبائی وزیر نے کیمپ کے انعقاد پر ریڈ کریسنٹ اور فینکس فاؤنڈیشن کی ٹیم کو خراج تحسین پیش کیا اور امید ظاہر کی کہ فلاحی ادارے اسی طرح حکومت کے ساتھ ملکر انسانی حقو ق کا تحفظ یقینی بنانے میں اپنا فعال کردار ادا کرتے رہیں گے۔ فینکس فاؤنڈیشن کے سربراہ ڈاکٹر نورالزمان نے میڈیا نمائندگان سے بات چیت کرتے ہوئے بتایا کہ ایک رپورٹ کے مطابق پاکستان میں ہر سال آٹھ سے بارہ ہزار بچے تھیلیسیمیا ء جیسے مرض کا شکار ہو رہے ہیں ۔

اس مرض کا واحد حل انتقال خون ہے اور انسانیت سے محبت کرنیوالے افراد ہی خون کے عطیات دیتے ہیں تاہم کورونا کی وجہ سے خون کی کمی کی شدت زیاد ہ محسوس کی گئی۔انہوں نے عوام بالخصوص نوجوانوں سے اپیل کی کہ کیمپ میں شرکت کریں اور کار خیر میں حصہ لیتے ہوئے خون کا عطیہ دیں۔بعد ازاں صوبائی وزیر نے ڈاکٹر نورالزمان کے ہمراہ سوسائٹی کلینک کا تفصیلی معائنہ کیا اور مریضوں کو دیجانیوالی تمام سہولیات کا جائزہ لیا۔انہوں نے کیمپ میں خون کا عطیہ دینے والے نوجوانوں سے بھی ملاقات کی اور ان کی انسانیت کی خدمت کو سراہتے ہوئے انکی حوصلہ افزائی بھی کی۔