جاگیرداری نظام کی بنیاد پر سندھ کے آقا بنے زرداری خاندان کے سپوت کے منہ سے انسانی حقوق کی باتیں اچھی نہیں لگتیں: فیاض الحسن چوہان

بلاول زرداری نے آج پھر اپنی اور اپنے پاپا کی لوٹ مار اور کرپشن پر پردہ ڈالنے کے لیے نان ایشوز پر بات کر کے عوام کو گمراہ کرنے کی کوشش کی: وزیرِ اطلاعات پنجاب

 جاگیرداری نظام کی بنیاد پر سندھ کے آقا بنے زرداری خاندان کے سپوت کے منہ سے انسانی حقوق کی باتیں اچھی نہیں لگتیں: فیاض الحسن چوہان

لاہور :وزیرِ اطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان نے بلاول زرداری کی میڈیا ٹاک پر اپنے ردعمل میں کہا ہے کہ بلاول زرداری نے آج پھر اپنی اور اپنے پاپا کی لوٹ مار اور کرپشن پر پردہ ڈالنے کے لیے نان ایشوز پر بات کر کے عوام کو گمراہ کرنے کی کوشش کی۔ انہوں نے کہا کہ جاگیرداری نظام کی بنیاد پر سندھ کے آقا بنے زرداری خاندان کے سپوت کے منہ سے انسانی حقوق کی باتیں اچھی نہیں لگتیں۔ وزیرِ اطلاعات پنجاب نے کہا کہ ریاستی اداروں اور عدالتوں پر اپنے نانا اور والدہ کے قاتلوں کو نہ پکڑنے کا الزام لگانے والے بلاول اپنے والد سے پوچھیں، انہوں نے دوران اقتدار بینظیر بھٹو شہید کے قاتلوں کو پکڑنے کے لیے کیا کِیا؟ حقیقت یہ ہے کہ جاگیردارانہ نظام کی عادی پیپلز پارٹی قیادت کو عدالتوں کے سوالات چبھ رہے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ سندھ کو پتھر کے دور میں دھکیلنے والی پیپلز پارٹی آج وزیراعظم عمران خان کی قیادت پر انگلی اٹھا رہی ہے۔

کک بیکس کے بادشاہ آصف زرداری نے اپنے خاندان کے ساتھ ملکر ملکی خزانے سے اپنی جیبیں بھریں اور آئی پی پیز کو پاکستان پر مسلط کر کے مہنگی بجلی سے اربوں روپے کمائے۔ فیاض الحسن چوہان نے کہا کہ وزیرِ اعظم عمران خان کی قیادت میں بجلی کے نئے ریٹس طے ہونے سے پاکستان کو سالانہ 400 ارب کی بچت ہو گی۔ کارکے کیس میں بھی حکومت کی جانب سے موثر اقدامات کے باعث 1.2 ارب ڈالر کا جرمانہ معاف کروایا گیا۔ انہوں نے کہا کہ وزیرِ اعظم عمران خان نیک نیتی اور ایمانداری کے ساتھ ملکی خزانے کا استعمال کر رہے ہیں۔