حکومت کا بھٹہ خشت مالکان کے لیے گرین لون سکیم کا آغاز

سکیم کے تحت بھٹہ مالکان کو بھٹوں کی زگ زیگ ٹیکنالوجی پر منتقلی کے لیے آسان اقساط پر قرضہ جات اک اجراء , بنک آف پنجاب کے تعاون سے لانچ کی جانے والی اس سکیم کے تحت دس لاکھ روپے کا قرض 3سے4فیصد شرح سود پر جاری

حکومت کا بھٹہ خشت مالکان کے لیے گرین لون سکیم کا آغاز

لاہور :صوبائی وزیر اوقاف سید سعید الحسن شاہ نے آج بھٹہ خشت مالکان سے ملا قات میں کہا ہے کہ حکومت نے بھٹہ خشت مالکان کے لیے گرین لون سکیم کا آغاز کر دیا گیا ہے۔ سکیم کے تحت بھٹہ مالکان کو بھٹوں کی زگ زیگ ٹیکنالوجی پر منتقلی کے لیے آسان اقساط پر قرض مہیا کیے جا رہے ہیں۔ بنک آف پنجاب کے تعاون سے لانچ کی جانے والی اس سکیم کے تحت دس لاکھ روپے کا قرض 3سے4فیصد شرح سود پر جاری کیا جائے گا۔

قرضوں کا اجراء وزیر اعظم کے کامیاب نوجوان پروگرام اور حکومت پنجاب کی روزگار سکیم کے تحت کیا جارہا ہے۔ حکومت پنجاب پورے صوبے میں بھٹوں کی زگ زیگ ٹیکنالوجی پر منتقلی کے لیے سبسڈی مہیاکررہی ہے۔ سکیم کے تحت قرضوں کی فراہمی کے لیے تحصیل کی سطح پر سہولت سینٹر قائم کر دئیے گئے ہیں۔ قرضوں کی فراہمی کے لیے سہولت سینٹرز کا انتخاب پی ڈی ایم اے اور بنک آف پنجاب کے مجوزہ پروگرام کے مطابق بھٹہ مالکان کی سکیم تک آسان رسائی کے لیے کیا گیا ہے۔

صوبائی وزیر نے کہا کہ کابینہ کی جانب سے سموگ کو آفت قرار دئیے جانے کے بعد پنجاب ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی سموگ کے خاتمے کے لیے دھواں پیدا کرنے والے عناصر پرکنٹرول کے لیے سر گرم عمل۔پنجاب میں پرانی طرز پر تعمیر شدہ بھٹہ خشت اور گاڑیوں سے پیدا ہونے والا دھواں سموگ کے تناسب میں اضافے کی سب سے بڑی وجہ ہیں۔بھٹوں کی بندش سے بھٹہ مالکان اور مزدور طبقہ کے روزگار کو داؤ پر لگانے کی بجائے بھٹوں کی جدید ٹیکنالوجی پر منتقلی ہی مسئلے کا بہترین حل تجویز کی گئی۔

پی ڈی ایم اے نے انسداد سموگ کاروائیوں کے دوران صوبے کے 60فیصد سے زائد بھٹوں کو زگ زیگ ٹیکنالوجی پر منتقلی کو یقینی بنایا۔اس دوران بھٹہ مالکان کی جانب سے وسائل کی کمی کی شکایات کے پیش نظر اتھارٹی کی سفارشات پر بھٹوں کی زگ زیگ ٹیکنالوجی پر منتقلی کے لیے مالی معاونت کا فیصلہ لیا گیا۔ گرین لون سکیم باقی ماندہ بھٹوں کی جدید ٹیکنالوجی پر منتقلی کو یقینی بنائے گی۔ انہوں نے کہا کہ سکیم کا مقصد سموگ سے پاک صاف پنجاب کے خواب کو تعبیر دینا ہے۔ بھٹہ مالکان آئندہ نسلوں کے لیے صاف ستھرے ماحول اور سموگ سے پاک فضا کے لیے حکومت پنجاب کا ساتھ دیں اور پرانی طرز پر تعمیر شدہ بھٹوں کی جلد از جلد زیگ زیگ ٹیکنالوجی پر منتقل کروائیں۔