پنجاب ہائی وے پٹرول)پی ایچ پی) شاہرات پر عوام کی خدمت اور تحفظ کیلئے سرگرم عمل۔ پندرہ روزہ کارکردگی رپورٹ جاری

ناجائز اسلحہ کی مد میں ملزمان سے07کلاشنکوف،11رائفلز،34گنز،129پسٹلز،72کارتوس،20میگزین اور801گولیاں برآمد

 لاہور  :  انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب انعام غنی کے ویژن اور ایڈیشنل آئی جی پنجاب ہائی وے پٹرول شاہد حنیف کی ہدایت پرپی ایچ پی کی جانب سے شاہرات پر عوام کی جان و مال کے تحفظ اور جرائم پیشہ عناصر کے خلاف تیز تر کارروائیاں جاری ہیں اور اس سلسلے میں پی ایچ پی ہیڈ کوارٹرز نے پندرہ روز کی کارکردگی رپورٹ جاری کر دی ہے۔تفصیلات کے مطابق پنجاب ہائی وے پٹرول نے روایت کو بر قرار رکھتے ہوئے گزشتہ پندرہ دنوں کے دوران اپنے عزم ”محفوظ شاہرات محفوظ عوام“کو اچھے طریقے سے نبھایااور لوگوں کی ہر لحاظ سے مدد کی۔ پنجاب ہائی وے پٹرول کی مختلف برانچوں نے ڈیپارٹمنٹ کی استعداد بڑھانے کیلئے مختلف ہیڈز کے تحت پراجیکٹس کا کام کیا جسکی تفصیل درج ذیل ہے۔پنجاب ہائی وے پٹرول نے تیز رفتاری اور ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی پر474، غیر قانونی سبز اور جعلی نمبر پلیٹ لگانے پر228 افراد کے خلاف کاروائی کی، ساونڈایکٹ کی خلاف ورزی کرنے پر17 افراد کے خلاف مقدمات قائم کیے اور غیرقانونی گیس سلنڈرنصب کرنے کے جرم میں 223 افراد کے خلاف مقدمات درج کیے۔ ناجائز اسلحہ رکھنے اور نمائش پر175افراد کے خلاف مقدمات درج کر کے72 کارتوس 20میگزین07کلاشنکوف،11رائفلز،34گنز129پسٹلز اور801گولیاں برآمدکئے اور منشیات اور شراب نوشی کے جرائم میں 227 مقدمات درج کر کے ملزمان کے قبضہ سے 5025لیٹر شراب،37کلو251 گرام چرس، برآمد کی۔ دریں اثناء پنجاب ہائی وے پٹرول نے 144اشتہاری اور15 عدالتی مفروان کو گرفتار کیا جبکہ دوران سفرمشکلات میں 5811 مسافروں کومدد فراہم کی14گمشدہ بچوں کو ان کے والدین سے ملوایا 400پتنگیں بھی برآمدکیں۔علاوہ ازیں ناجائز تجاویزات کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے248عارضی تجاویزات ختم کروائی گئیں۔۔ایڈیشنل آئی جی پی ایچ پی شاہد حنیف نے کہا ہے کہ کروناجیسی مہلک وباء کے دوران بھی پی ایچ پی اہلکار اپنی جانوں کی پرواہ کئے بغیر فرائض منصبی کی ادائیگی کا سلسلہ فرض شناشی کے ساتھ جاری رکھے ہوئے ہیں اور عوام کی جان و مال کا تحفظ اور بے لوث خدمت پی ایچ پی کا نصب العین ہے۔