پنجاب پولیس امن و امان کے قیام کیلئے مستند کردار ادا کر رہی ہے: سبطین خان

انصاف کی تیز ترین فراہمی کیلئے پولیس کا کردار بنیادی اہمیت کا حامل ہے: وزیر جنگلات

پنجاب پولیس امن و امان کے قیام کیلئے مستند کردار ادا کر رہی ہے: سبطین خان

لاہور:صوبائی وزیر جنگلات سردار محمد سبطین خان نے کہا ہے کہ پنجاب پولیس عوام کے مسائل کے حل اور انصاف کی فراہمی کیلئے اپنا بھرپور کردار ادا کر رہی ہے تاہم اس عمل کو مزید تیز کرنے کی ضرورت ہے۔ پولیس کا کردار جتنا متحرک ہوگا عوام کا اتنا ہی پولیس پر اعتماد بڑھے گا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے آئی جی پنجاب انعام غنی سے ملاقات کے دوران کیا۔ انہوں نے آئی جی پنجاب کی تحسین بھی کی اور کہا کہ ان کی قیادت میں پنجاب میں انتہائی مختصر عرصہ میں جرائم کی شرح میں کمی لائی گئی ہے۔ سبطین خان نے اس موقع پر آئی جی پنجاب کو اپنے حلقہ کے متعلقہ مسائل سے بھی آگاہ کیا جبکہ میانوالی پولیس کے مستند کردار کی بھی تعریف کی۔ انہوں نے کہا کہ انصاف کی تیز ترین فراہمی کیلئے پولیس کا کردار بنیادی اہمیت کا حامل ہے۔

عوام کے تھانوں سے متعلقہ بڑھتے ہوئے مسائل کے سدباب، امن و امان کے قیام اور ظالموں، ناانصافیوں کی بیخ کنی کیلئے پولیس کو اپنا کردار مزید وسیع کرنے کی ضرورت ہے۔ اس موقع پر باہمی دلچسپی کے دیگر امور کے ساتھ ساتھ صوبے کے امن و امان کے مجموعی مسائل پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ سردار سبطین خان نے گذشتہ روز الیکشن کمیشن کے سامنے اپوزیشن کے احتجاج پر تنقید کرتے ہوئے اسے ''ٹھنڈا'' قرار دیا اور کہا کہ الیکشن کمیشن کے سامنے چند کارکنان کے ہمراہ احتجاج نے اپوزیشن کی نام نہاد مقبولیت کا بھانڈا ایک مرتبہ پھر پھوڑ دیا۔ انہوں نے کہا کہ پی ڈی ایم عام لوگوں کو پیسے اور راشن کا لالچ دے کر لائی لیکن احتجاج کے شرکاء کو ایک ڈھیلا بھی نہیں دیا گیا۔

سبطین خان نے مزید کہا کہ 11 اتحادی جماعتوں نے چند سو کارکنوں کے ہمراہ لفظ احتجاج کو بھی بدنام کیا ہے۔ ان کے اپنے کارکن بھی اب ان کے جھوٹے دلاسوں میں نہیں آرہے۔ انہوں نے کہا کہ پی ڈی ایم لیڈران شرانگیزی پھیلا کر کارکنوں کو ہنگامہ آرائی پر اکسا رہے ہیں جس کا انہیں خمیازہ بھگتنا پڑے گا۔ سبطین خان کا کہنا تھا کہ اپوزیشن کی کرپشن ثابت شدہ ہے جو پردہ میں اب نہیں چھپائی جا سکتی۔ انہوں نے کہا کہ پی ڈی ایم احتساب سے راہ فرار مت اختیار کرے اور اپنی مقبولیت کا راز مزید فاش ہونے کیلئے 2023 تک انتظار کرے۔