چیئرمین واپڈا کا پراجیکٹ سائٹ کا دورہ ، دیا مر بھاشا ڈیم پراجیکٹ پر پیش رفت تیزی سے جاری

کنٹریکٹر کی سائٹ پربر وقت موبلائزیشن یقینی بنانے کے لئے انتظامات کا جائزہ، منصوبے پر تعمیر کا بروقت آغاز پہلی ترجیح ہے: چیئرمین واپڈا

 چیئرمین واپڈا کا پراجیکٹ سائٹ کا دورہ ، دیا مر بھاشا ڈیم پراجیکٹ پر پیش رفت تیزی سے جاری

دیا مر بھاشا ڈیم پراجیکٹ کے مین ڈیم کا کنٹریکٹ ایوارڈ ہونے کے پس منظر میں چیئرمین واپڈا لیفٹیننٹ جنرل مزمل حسین (ریٹائرڈ)نے آج دیا مر بھاشا ڈیم پراجیکٹ سائٹ کا دورہ کیا۔ اُن کے دورے کا مقصد سائٹ پر کئے جارہے انتظامات کاجائزہ لینا تھا تاکہ پراجیکٹ سائٹ پر کنٹریکٹر کی بروقت موبلائزیشن کو یقینی بنایا جاسکے۔ اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے چیئرمین واپڈا نے کہا کہ دیا مر بھاشا ڈیم پر تعمیراتی کام کا بروقت آغاز واپڈا کی پہلی ترجیح ہے۔اُنہوں نے کہا کہ پراجیکٹ نہایت اہمیت کا حامل ہے اور اِس کے مکمل ہونے پر ملک کی تقدیر بدل جائے گی۔قومی ترقی کے ساتھ ساتھ اِس منصوبے کی بدولت پراجیکٹ ایریا میں ترقی اور خوشحالی کا ایک نیا دور شروع ہوگا۔

چیئرمین نے کہا کہ دیا مر بھاشا ڈیم میں پانی ذخیرہ کرنے کی مجموعی صلاحیت8.1ملین ایکڑ فٹ جبکہ بجلی پیدا کرنے کی صلاحیت 4ہزار 500 میگاواٹ ہے اور یہ ملکی اقتصادیات کو مستحکم کرنے میں اہم کردار ادا کرے گا۔ منصوبے کی بدولت پاکستان میں انسانی وسائل کو ترقی دینے میں مدد ملے گی۔ پراجیکٹ کی تعمیر سے انجینئرز اور دیگر سٹاف کے لئے 16 ہزار 500ملازمتوں کے مواقع پیدا ہوں گے۔

دیا مر بھاشا ڈیم کی تعمیر کے لئے مقامی لوگوں کی قربانیوں کو خراجِ تحسین پیش کرتے ہوئے چیئرمین واپڈا نے کہا کہ متاثرین کی آباد کاری اور مقامی لوگوں کی معاشی اور معاشرتی ترقی کے لئے اعتماد سازی کے اقدامات پر 78 ارب 50کروڑ روپے خرچ کئے جائیں گے۔

اُنہوں نے اِس امر پر اطمینان کا اظہار کیا کہ اعتما د سازی کے اقدامات کے تحت آب نوشی، آبپاشی، تعلیم اور صحت کے موجودہ انفراسٹرکچر کو بہتر بنانے کے لئے 44 ترقیاتی سکیمیں مکمل کی جاچکی ہیں۔

مقامی طالب ِ علموں کو اعلیٰ معیار کی تعلیمی سہولیات بہم پہنچانے کے لئے چلاس کیڈٹ کالج کی تعمیر آخری مراحل میں ہے جبکہ علاقہ میں بجلی کی ضروریات پوری کرنے کے لئے 3میگاواٹ پیداواری صلاحیت کا تھک ہائیڈرو پاور پراجیکٹ بھی تکمیل کے قریب ہے۔ چیئرمین واپڈا کے دورہ کے موقع پر جنرل منیجر دیا مر بھاشا ڈیم پر اجیکٹ عامر بشیر چوہدری نے اُنہیں پراجیکٹ ایریا میں ہونے والی پیش رفت کے بارے میں بریفنگ دی۔