ملک بھر میں( آج )یوم یکجہتی فلسطین منایا جائے گا، وزیر اعظم کی ہدایت پر فلسطینی بھائیوں کی امداد کےلئے اقدامات کئے جائیں، علامہ طاہرمحمود اشرفی کی پریس کانفرس

ملک بھر میں( آج )یوم یکجہتی فلسطین منایا جائے گا، وزیر اعظم کی ہدایت پر فلسطینی بھائیوں کی امداد کےلئے اقدامات کئے جائیں، علامہ طاہرمحمود اشرفی کی پریس کانفرس

لاہور :وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے مذہبی ہم آہنگی علامہ طاہرمحمود اشرفی نے کہا ہے کہ پاکستا ن کی حکومت اور عوام فلسطینی بھائیوں کے ساتھ کھڑے ہیں، ملک بھر میں یوم یکجہتی فلسطین منایا جائے گا، آج جمعہ المبارک کوفلسطین کےلئے اظہار یکجہتی کریں گے اور خصوصی دعائیں کریں گے،300 فلسطینی شہدا میں سے 35 فیصد عورتیں اور بچے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار جمعرات کے روز انہوں نے دیگر علما کرام کے ہمراہ اپر مال قرآن اکیڈیمی میں پریس کانفرنس سے خطاب و میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

علامہ طاہر محمود ا شرفی نے کہا کہ پاکستانی وزیر خارجہ اقوام متحدہ میں فلسطین میں ہونے والے مظالم کے ایشو کو اٹھائیں گے،ملک بھر میں پر امن احتجاجی ریلیاں اور اجتماعات ہوں گے، وزیر اعظم کی ہدایت پر فلسطینی بھائیوں کی امداد کےلئے اقدامات کئے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم فلسطینی قیادت اور سفارت خانے سے رابطے میں ہیں جو ممکن ہوا پاکستان اپنے فلسطینی بھائیوں کےلئے کرے گا، او آئی سی کے اجلاس میں ہم نے کہا ہے کہ پاکستان ہر خدمت کےلئے تیار ہے، کشمیر اور فلسطین کا مسئلہ انسانیت کا مسئلہ بن چکا ہے، امت کی وحدت کے بغیر یہ مسائل حل نہیں ہو سکتے، جو کردار ادا کیا جا سکتا ہے وہ کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کی وبا میں احتیاطی تدابیر کو اختیار کرتے ہوئے احتجاجی ریلیوں میں شرکت کریں، پہلا مرحلہ سیز فائر کا ہے، دوسرا مرحلہ آزاد اور خودمختار فلسطینی ریاست کا قیام ہے۔

علامہ طاہرمحمود اشرفی نے کہا کہ القدس کل بھی ہمارا تھا آج بھی ہمارا ہے، منظم اور فعال کردار ادا کرنے کی ضرورت ہے، یہ سب جو ہو رہا ہے امت کی کمزوری کی وجہ سے ہو رہا ہے، تمام برادر اسلامی ممالک کے ساتھ رابطے میں ہیں، پاکستان عالم اسلام کی ایک مضبوط قوت ہے، پاکستان سے آواز بلند ہوتی ہے تو پوری دنیا پہ اثر ہوتا ہے، ہم اس کاز کے اوپر روز اول سے کھڑے ہیں اور کھڑے رہیں گے۔ انہوں نے کہا کہ اقلیتوں کے حقوق کا تحفظ موجودہ حکومت کی ترجیحات میں شامل ہے ،اقلیتوں کے حقوق کے حوالے سے جو بھی ممکن ہو سکا کیا جائے گا۔

اس موقع پر علامہ زبیر احمد ظہیر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسلامی جمہوری اتحاد فردوس مارکیٹ سے بڑا مظاہرہ، لبرٹی مارکیٹ میں فلسطین کے مسئلے پر احتجاج کریں گے، جو اسرائیل کی بربریت و دہشت گردی کی حمایت کررہے ہیں اس کی پر زور مذمت کرتے ہیں، دراصل انصاف پسند اور انسانی حقوق کےلئے اپوزیشن اور اقلیتی برادری اہم کردار ادا کررہی ہے ، میں اعلان کرتاہوں کہ اس اتحاد کا نتیجہ ضرور نکلے گا۔ انہوں نے کہا کہ مسلم امہ آج متحد ہوجائے تو فلسطین اور کشمیر آزاد ہوجائے گا ۔

عبد الوہاب روپڑی نے اپنے خطاب کے دوران کہا کہ حکومت پاکستان کا فلسطینیوں پر موقف مضبوط ہے، اس معاملے پر آج جمعتہ المبارک کے روز فلسطینیوں سے اظہار یکجہتی کرتے ہوئے پرامن احتجاج کریں گے، فلسطینیوں کا حل باہمی اتحاد و اتفاق ہے، اگر مسلمان ممالک اتحاد کرلیتے ہیں تو تمام مسائل حل ہوجائیں گے، اس وقت دنیا میں مسئلہ فلسطین اہم مسئلہ ہے۔انہوں نے کہا کہ فلسطین میں بچوں، بوڑھوں کی شہادت کی اطلاعات ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ اسرائیل میں سات سے سترسال کے لوگوں کو گرفتار کرر ہے ہیں ، وزیر اعظم کی کال پر آج ملک بھر میں اظہار یکجہتی فلسطین کا دن منایاجائے گا۔

انہوں نے کہا کہ تین سو فلسطینی پینتیس فیصد عورتیں اور بچوں کی شہادت پر دنیا خاموش ہے۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان نے محمود عباس، اردگان اور سعودی عرب سمیت تمام عرب ممالک کے سربراہان سے بات کی ہے۔انہوں نے کہا کہ شاہ محمود قریشی اقوام متحدہ میں پاکستان کا موقف پیش کریں گے، فلسطین کا اسلام سے زیادہ انسانیت کا مسئلہ بن چکا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ لاہور میں تمام مکاتب فکر کے قائدین ریگل چوک چرچ میں فلسطینی مظلوموں کے ساتھ یکجہتی کااظہار کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان کی ہدایت پر فلسطینی بھائیوں کےلئے ادویات اور خوراک کاانتظام کریں گے، مصر کے سفارت خانے سے رابطے میں ہیں، ہم سے جو کچھ ہوا وہ فلسطینیوں کےلئے کریں گے، او آئی سی جو خدمت کہے گی اس پر عمل درآمد کریں گے ، اتحاد و یکجہتی کی آواز بنیں گے، امت کی وحدت کے بغیر مسائل حل نہیں ہو سکتے، کشمیر اور فلسطین کا مسئلہ انسانیت کا مسئلہ بن چکا ہے جس کےلئے آگے بڑھنا ہے، قوم فلسطینیوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کےلئے کرونا ایس او پیز کے تحت اپنا کردار ادا کرے