ایمریٹس سفر کے لئے کرونا ٹیسٹنگ کی معلومات کی حامل IATA Travel Pass استعمال کرنے والی اولین ایئرلائنز میں شامل 

آئی اے ٹی اے ٹریول پاس دراصل ایک موبائل ایپ ہے جو مسافروں کو کسی بھی ملک میں درکار کرونا ٹیسٹنگ یا ویکسین کی معلومات سے متعلق سفر کے بحفاظت انتظام کیلئے مسافروں کو مدد فراہم کرتی ہے

ایمریٹس سفر کے لئے کرونا ٹیسٹنگ کی معلومات کی حامل IATA Travel Pass استعمال کرنے والی اولین ایئرلائنز میں شامل 

لاہور:  ایمریٹس انٹرنیشنل ایئر ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن (آئی اے ٹی اے) سے اشتراک کرنے والی دنیا کی اولین ایئرلائنز میں شامل ہوگئی ہے۔ آئی اے ٹی اے ٹریول پاس دراصل ایک موبائل ایپ ہے جو مسافروں کو کسی بھی ملک میں درکار کرونا ٹیسٹنگ یا ویکسین کی معلومات سے متعلق سفر کے بحفاظت انتظام کیلئے مسافروں کو مدد فراہم کرتی ہے۔  آئی اے ٹی اے ٹریول پاس کے حامل ایمریٹس کے مسافر اپنے سفر سے قبل ٹیسٹ کی تصدیق یا مطلوبہ مقام کے لئے درکار ویکسینیشن کی شرائط کی تکمیل پر ڈیجیٹل پاسپورٹ تخلیق کرسکتے ہیں۔ وہ سفر میں سہولت کے لئے حکام اور ایئرلائنز کے ساتھ ٹیسٹ اور ویکسینیشن سرٹیفکیٹس بھی پیش کرسکیں گے۔ اس نئی ایپ سے مسافر اپنے پورے سفر میں بلاتعطل اور ڈیجیٹل طریقے سے تمام سفری دستاویز کا انتظام کرسکیں گے۔ 

اسے مکمل متعارف کرانے سے قبل ایمریٹس دبئی میں پہلے مرحلے پر مسافروں کی روانگی سے قبل کرونا پی سی آر ٹیسٹ کی توثیق کا نفاذ کرے گا۔ اس ابتدائی مرحلے کا آغاز اپریل میں متوقع ہے جس کی بدولت دبئی سے سفر کرنے والے ایمریٹس کے مسافر اس ایپ کے ذریعے ایئرپورٹ پہنچنے سے قبل ہی ایئرلائن کو براہ راست کرونا ٹیسٹ کے نتائج سے آگاہ کرسکیں گے جس سے چیک ان سسٹم پر خود کار طریقے سے انکی تفصیلات موصول ہوجائیں گی۔ 

ایمریٹس کے چیف آپریٹنگ آفیسر عادل الرضا نے کہا، "بین الاقوامی سفر بدستور پہلے کی طرح محفوظ ہے، موجودہ عالمی وبا کے ساتھ نئے سفری قوانین اور شرائط ہیں۔ ہم نے معلومات ڈیجیٹل اور سادہ طریقے سے بھیجنے کے لئے جدت انگیز حل پر آئی اے ٹی اے کے ساتھ کام کیا ہے جو ہمارے ایئرلائن سسٹمز میں مختلف ممالک اور حکومتوں کو بحفاظت اور موثر انداز سے درکار ہے۔ اس اقدام پر آزمائشی مرحلے میں دنیا کی اولین ایئرلائنوں میں شامل ہونے پر ہمیں فخر ہے جس سے ہمیں اپنے مسافروں کی سفری ضروریات میں باآسانی سہولت پہنچانے کے ساتھ ساتھ پہلے سے زیادہ بہتر تجربات حاصل ہوں گے۔

آئی اے ٹی اے کے سینئر وائس پریذیڈنٹ برائے ایئرپورٹ، پیسنجر، کارگو اور سیکورٹی، نک کرین نے کہا، "مشرق وسطیٰ خطے میں آئی اے ٹی اے ٹریول پاس کی دستیابی کے لئے ایمریٹس کے ساتھ کام کرنے پر ہمیں فخر ہے۔ عالمی سطح پر صارفین اور نیٹ ورک ٹریفک کے ساتھ ایمریٹس کے پارٹنر کے طور پر قیمتی آراءاور فیڈ بیک سے بھی ٹریول پاس پروگرام بہتر بنایا جائے گا۔ عالمی وباءکے دوران بین الاقوامی سفر کے لئے یہ پہلا قدم ہے جس میں لوگوں کو ہر ممکن طریقے سے باسہولت انداز سے اعتماد فراہم کیا گیا ہے جس کی بدولت وہ مختلف ممالک میں داخلے کے لئے کرونا سے متعلق تمام شرائط پوری کرسکیں۔ جیسے فضائی سفر معمول پر آتا ہے تو آئی اے ٹی اے ٹریول پاس کی سہولیات میں اضافہ ہوگا تاکہ حکومتی سطح پر تمام ٹیسٹنگ یا ویکسینیشن کی مصدقہ شرائط پوری کی جاسکیں اور ایمریٹس کے صارفین ان خدمات سے فائدہ اٹھانے والوں اولین افراد میں شامل ہوں گے۔

آئی اے ٹی اے ٹریول پاس ایپ سے سفری شرائط کی انٹیگریٹڈ رجسٹری کے ذریعے مسافر تمام مقامات کے سفر اور داخلے کی بالکل مستند معلومات بھی حاصل کرسکیں گے، چاہے وہ کہیں سے بھی سفر کررہے ہوں۔ اس میں ٹیسٹنگ کی رجسٹری اور ویکسینیشن مراکز بھی شامل ہوں گے جن کی بدولت مسافروں کو اپنی روانگی کے مقام پر ٹیسٹنگ مراکز اور لیب تلاش کرنے میں زیادہ سہولت ہوگی جن کی بدولت اس مقام پر ٹیسٹنگ کے اسٹینڈرڈز اور ویکسینیشن کی شرائط پوری کی جاسکیںگی۔ 

یہ پلیٹ فارم باضابطہ لیب اور ٹیسٹ مراکز کو بحفاظت ٹیسٹ نتائج یا مسافروں کو ویکسینیشن سرٹیفکیٹس کے ذریعے بھی بااختیار کرے گا۔ عالمی رجسٹری کا آئی اے ٹی اے کے زیراہتمام انتظام کیا جائے گا اور تمام اسٹیک ہولڈرز کو بحفاظت ضروری معلومات دستیاب ہوں گی تاکہ مسافروں کو بلاتعطل سفری خدمات میسر ہوں۔  ایمریٹس تمام ٹچ پوائنٹس پر سفری عمل بلاتعطل بنانے کے لئے پرعزم ہے۔ گزشتہ چند ماہ میں اس نے دبئی انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر انٹیگریٹڈ بائیومیٹرک پاتھ اور دیگر خدمات بشمول سیلف چیک ان اور بیگ ڈراپ کیوسکس سمیت اسمارٹ کانٹیکٹ لیس سفر متعارف کرایا ہے تاکہ ایئرپورٹ پر تمام عمل روانی سے سرانجام دیا جاسکے۔