گھریلو مرغبانی کے منصوبے سے بے وسیلہ افراد کی معاشی دستگیری ممکن ہوئی ہے:سردار حسنین بہادر دریشک

اسی طرح مالی سال 2020-21  میں ایک لاکھ 32 ہزار 66 پرندے تقسیم کیے جاچکے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ اس پروگرام کے تحت 5 مرغیاں اور 1 مرغا یا 12 مرغوں کا سیٹ شفاف طریقے سے مستحق افراد میں تقسیم کیا جارہا ہے

گھریلو مرغبانی کے منصوبے سے بے وسیلہ افراد کی معاشی دستگیری ممکن ہوئی ہے:سردار حسنین بہادر دریشک

لاہور:صوبائی حکومت نے گھریلو مرغبانی کے فروغ کے منصوبہ کے پہلے سال کے دوران 48 ہزار 753مستحق افراد میں 4 لاکھ 65 ہزار پرندے تقسیم کیے ہیں تاکہ بے وسیلہ افراد کی معاشی دستگیری کی جاسکے۔ یہ بات صوبائی وزیر لائیو سٹاک سردار حسنین بہادردریشک نے آج اپنے دفتر میں ایک عوامی وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے بتایا کہ گھریلو مرغبانی منصوبے کے پہلے سال 2019-20 میں 5 لاکھ پرندے تقسیم کرنے کے ہدف کا93 فیصد ٹارگٹ حاصل کرلیا گیا ہے۔ اسی طرح مالی سال 2020-21  میں ایک لاکھ 32 ہزار 66 پرندے تقسیم کیے جاچکے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ اس پروگرام کے تحت 5 مرغیاں اور 1 مرغا یا 12 مرغوں کا سیٹ شفاف طریقے سے مستحق افراد میں تقسیم کیا جارہا ہے۔

اس پروگرام کے لئے کوئی پرندہ مارکیٹ سے نہیں لیا جارہا ہے بلکہ محکمہ لائیو سٹاک کے ریسرچ انسٹی ٹیوٹ کے زیر اہتمام پرندوں کی افزائش سرکاری پولٹری فارمز پرجارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ عام دیسی مرغیاں ایک سال میں 110 سے 120 انڈے دیتی ہیں جبکہ اس کے پروگرام کے تحت دی جانیوالی مرغیاں سالانہ تقریباً 255 انڈے دیتی ہیں جس سے نہ صرف عوام الناس کو وافر انڈوں کی فراہمی ہوگی بلکہ دیسی گوشت بھی میسر آ سکے گا۔انہوں نے مزید کہا کہ ٹارگٹ سے زیادہ درخواستوں کی وصولی اور عوام کی جانب سے اس پروگرام کو مزید بڑھانے کی درخواستیں عوامی فلاح کے اس پروجیکٹ کی کامیابی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔