چائلڈ پروٹیکشن: -یونیسیف کی پنجاب کوتعاون بڑھانے کی پیشکش

وزیر سماجی بہبود سے یونیسیف کے ڈپٹی ہیڈ پاکستان ڈاکٹر تاج الدین اوؤلے کی ملاقات کم عمری کی شادیاں ایک سماجی مسئلہ ہیں: یاور عباس بخاری

چائلڈ پروٹیکشن: -یونیسیف کی پنجاب کوتعاون بڑھانے کی پیشکش

لاہور:صوبائی وزیر سماجی بہبود و بیت المال سید یاور عباس بخاری سے یونیسیف کے ڈپٹی ہیڈ ڈاکٹر تاج الدین اوؤلے (Tajudeen Oyewale) نے ملاقات کی۔ سیکرٹری سوشل ویلفیئر حسن اقبال، ڈائریکٹر پروگرامز عرفان گوندل، چیف آف فیلڈ یونیسیف پنجاب براڈ نگیمبی، چائلڈ پروٹیکشن آفیسرز زاہدہ منظور اور عائشہ خا ن بھی موجود تھے۔ ملاقات میں حفاظت اطفال، چائلڈ پروٹیکشن کے قانون میں اصلاحات میں پیشرفت بشمول قانونی اصلاحا ت،کو رونا کے تناظر میں سماجی معاونت، کم عمری کی شادیوں کی روک تھام اور برتھ رجسٹریشن کے امور کا جائزہ لیا۔ ڈاکٹر تاج الدین اوؤلے نے پنجاب میں یونیسیف کی جانب سے تعاون بڑھانے کی پیشکش کی۔

صوبائی وزیر نے کہا کہ تحفظ حقوق اطفال کومزید موثر بنانے کے لئے قوانین میں ضروری اصلاحات لائی جا رہی ہیں تاکہ بہتر نتائج حاصل کئے جا سکیں۔ یاور بخاری نے مزیدکہا کہ کم عمری کی شادیاں اہم سماجی مسئلہ ہے جس کا تدارک کرنا ہوگا کیونکہ چائلڈ میرج سے پیچیدگیاں پیدا ہوتی ہیں جو سماجی ابتری کا باعث بن سکتی ہیں۔ سیکرٹری سوشل ویلفیئر حسن اقبال نے کہا کہ مسودہ بل فائنل کرنے سے پہلے متعلقین کو اعتماد میں لیا جائے گا۔  اس کے ساتھ ساتھ برتھ رجسٹریشن پر زیادہ توجہ دینے کی ضرورت ہے۔ تاج الدین اوؤلے نے محکمہ سوشل ویلفیئرکے اقدامات پر اظہار اطمینان کرتے ہوئے کہا کہ چائلڈ پروٹیکشن کو یقینی بنانے کیلئے یونیسیف ضروری تعاون بڑھانے کیلئے تیار ہے۔ چیف آف فیلڈ ول براڈ نگیمبی نے کہا کہ بچہ مزدوری کی حوصلہ شکنی کے حوالے سے مزید اقدامات درکار ہیں۔

٭٭٭