ایئرکولر چلانے کیلئے وینٹیلیٹر بند کردیا، کورونا کا مریض دم توڑ گیا

عالمی وبا کورونا وائرس سے جہاں دنیا بھر میں اموات کا سلسلہ جاری ہے وہیں انسانی غفلتوں کے نتیجے میں بھی جانیں ضائع ہو رہی ہیں

ایئرکولر چلانے کیلئے وینٹیلیٹر بند کردیا، کورونا کا مریض دم توڑ گیا

بھارت کے ایک اسپتال میں کورونا مریض کی عیادت کرنے آئے گھر والوں نے گرمی سے بچنے کے لیے وینٹیلیٹر بند کر کے ایئر کولر چلا لیا جس کے نتیجے میں کورونا وائرس کا مریض دم توڑ گیا۔ عالمی وبا کورونا وائرس سے جہاں دنیا بھر میں اموات کا سلسلہ جاری ہے وہیں انسانی غفلتوں کے نتیجے میں بھی جانیں ضائع ہو رہی ہیں، واقعہ بھارتی ریاست راجھستان میں پیش آیا جہاں گزشتہ ہفتے  کورونا مریض کی عیادت کی غرض سے اسپتال آنے والے ایک خاندان نے گرمی سے بچنے کے لیے وینٹیلیٹر کا سوئچ نکال کر ایئر کولر کا سوئچ لگا دیا، دم گھٹنے کے باعث کورونا کا شکار مریض دم توڑ گیا۔

بھارتی ویب سائٹ ’پونے مرر‘ کے مطابق اسپتا ل کے میڈیکل سپرینٹینڈنٹ نوین سیکسینا کا کہنا ہے کہ مریض کے مرنے کے فوراً بعد ہی موت کی وجہ جاننے کے لیے تحقیقاتی کمیٹی تشکیل دے دی گئی تھی ،کووڈ 19 سے متاثرہ مریض کو ملنے اُس کے گھر والے آئے تھے اور اپنے ساتھ ایک ایئر کولر بھی لائے تھے، مریض کے گھر والوں نے گرمی کی شدت سے بچنے کے لیے مریض کے وینٹیلیٹر کے سوئچ کی جگہ ایئر کولر کا سوئچ لگا دیا تھا۔

میڈیکل سپرینٹینڈنٹ نوین سیکسینا کے مطابق وینٹیلیٹر کچھ دیر کے لیے بیٹری کے سہارے چلتا رہا اور بعد ازاں بیٹری کے بند ہوجانے پر مریض کی حالت تشویش ناک ہو گئی، اسپتال انتظامیہ اور میڈیکل اسٹاف کی جانب سے مریض کی جان بچانے کے لیے جو کچھ کیا جا سکتا تھا کیا گیا مگر مریض جانبر نہ ہو سکا۔ بعد ازاں مریض کے لواحقین کی جانب سے ڈاکٹروں پر حملہ کیا گیا۔ اسپتال میں فرائض پر مامور ڈاکٹر وروون کا کہنا ہے کہ مریض کے گھر والوں کے رویہ کے خلاف اسپتال انتظامیہ کو شکایت درج کرا دی ہے، اسپتال کے دیگر ڈاکٹروں کی جانب سے بھی شکایت کی حمایت کی گئی اور کام کا بائیکاٹ کرتے ہوئے کچھ دیر کے لیے کام روک دیا گیا ہے۔