سفری پابندی سے دورہ جنوبی افریقا کو خطرہ نہیں، کرکٹ بورڈ، ٹیم ہفتے کو روانہ ہوگی

سفری پابندی سے دورہ جنوبی افریقا کو خطرہ نہیں، کرکٹ بورڈ، ٹیم ہفتے کو روانہ ہوگی

کراچی : حکومت پاکستان نے کورونا وائرس کی وجہ سے جنوبی افریقا سمیت 12 ملکوں کو سی کٹیگری کے ملکوں میں شامل کر لیا ہے جس کے مطابق جنوبی افریقا سے پاکستان آنے والوں پر پابندی 23 مارچ سے 5 اپریل تک رہے گی۔ تاہم پاکستان کرکٹ بورڈ کا کہنا ہے کہ پاکستانی ٹیم پروگرام کے مطابق جنوبی افریقا کا دورہ کرے گی۔ نئی پابندیوں سے دورے کو کوئی خطرات نہیں ہیں۔ پاکستانی ٹیم ہفتے کو لاہور سے چارٹرڈ فلائٹ پر جوہانسبرگ کے لئے روانہ ہورہی ہے جبکہ 12مئی کو زمبابوے سے چارٹرڈ فلائٹ سے وطن واپس لوٹے گی۔ واضح رہے کہ پاکستان میں کورونا وائرس کی روک تھام کی کوشش میں سول ایوی ایشن اتھارٹی نے اے، بی اور سی کیٹیگری میں شامل ممالک کی نئی فہرست جاری کردی۔ یہ اقدام وائرس کی جنوبی افریقی اور برازیلی قسم سامنے آنے کے بعد کیا گیا اور 12 ممالک سے مسافروں کی آمد پر مکمل پابندی عائد کردی۔ سی اے اے نے کہا کہ این سی او سی نے آگاہ کیا کہ کیٹیگری سی میں شامل ممالک سے پاکستان آمد پر مکمل پابندی ہوگی جس میں پاکستانی پاسپورٹ، نائیکوپ اور پی او سی رکھنے والے افراد بھی شامل ہوں گے جو اس سے قبل اس پابندی سے مستثنیٰ تھے۔ اعلامیے کے مطابق یہ عارضی اقدام پاکستان میں کووِیڈ 19 کا پھیلاؤ روکنے کے لیے اٹھائے گئے اقدامات کے سلسلے کے طور پر اٹھایا گیا۔ سی کٹیگری میں جنوبی افریقا کے علاوہ بوٹسوانا، برازیل، کولمبیا، گھانا، کومروس، کینیا، موزمبیق، پیرو، روانڈا، تنزانیہ اور زمبیا کو شامل کیا گیا ہے۔ نمائندہ جنگ کے استفسار پر پی سی بی ترجمان نے کہا کہ جنوبی افریقا سے آنے پر پابندی ہے جانے پر کوئی پابندی نہیں ہے۔ البتہ پاکستان کرکٹ بورڈ صورتحال کو مانیٹر کررہا ہے۔کھلاڑیوں کی جانوں کو خطرے میں ڈالنے کے لئے کوئی خطرہ مول نہیں لیں گے۔ پی سی بی نے حکومت سے لاہور میں کیمپ کے لئے اجازت لی ہے اس لئے حکومت کو علم ہے کہ پاکستانی ٹیم نے جنوبی افریقا کا دورہ کرنا ہے۔ پاکستانی ٹیم جنوبی افریقا میں تین کا قرنطینہ مکمل کرے گی۔ اس دوران پریکٹس کی اجازت ہوگی۔ میچ جوہانسبرگ اور سنچورین میں ہوں گے۔ ٹیم جوہانسبرگ میں قیام کرے گی۔ میچ والے دن ٹیم بذریعہ بس ایک گھنٹے کی مسافت طے کرکے سنچورین جائے گی۔ جنوبی افریقا میں ون ڈے میچ 2،4،7اپریل کو ہوں گے۔ٹی ٹوئینٹی انٹر نیشنل 10،12،14،16اپریل کو ہوں گے۔ جس کے بعد پاکستانی ٹیم کمرشل فلائٹ سے زمبابوے جائے گی۔ زمبابوے کے دورے کا شیڈول ابھی جاری نہیں ہوا ہے۔ ترجمان نے کہا کہ پاکستانی جنوبی افریقا میں کورونا ایس او پیز کے تحت جارہی ہے۔ روانگی سے قبل کورونا ٹیسٹ ہوں گے اور وہی کھلاڑی جہاز پر بیٹھیں گے جن کے پاس منفی ٹیسٹ کی رپورٹ ہوگی جبکہ جنوبی افریقا پہنچنے پر ہر کھلاڑی کا کورونا ٹیسٹ ہوگا۔ جس کی رپورٹ آنے کے بعد کھلاڑیوں کو پریکٹس کی اجازت ہوگی۔