خیبر پختونخوا میں کئی منصوبوں پر کام تیزی سے جاری ،آئندہ سال مزید منصوبوں پر کام کا آغاز کیا جائیگا ، نیشنل ہائی وے اتھارٹی

خیبر پختونخوا میں کئی منصوبوں پر کام تیزی سے جاری ،آئندہ سال مزید منصوبوں پر کام کا آغاز کیا جائیگا ، نیشنل ہائی وے اتھارٹی

اسلام آباد :نیشنل ہائی وے اتھارٹی صوبہ خیبر پختونخوا میں جاری منصوبوں پر کام تیزی سے جاری رکھے ہوئے ہے جبکہ رواں سال مزید منصوبوں پر کام کا آغاز کرے گی جبکہ آئندہ مالی سال کے دوران نئے منصوبوں پر کام کے آغاز سے صوبے میں معاشی سرگرمیوں کا آغاز ہو گا۔ این ایچ اے کی جانب سے جاری ایک پریس ریلیز کے مطابق ان خیالات کا اظہار وفاقی وزیر مواصلات مراد سعید نے وزیر اعلی خیبر پختونخوا محمود خان کو گزشتہ روز جاری اور نئے منصوبوں سے متعلق بریفنگ کے دوران کیا۔ اجلاس کے دوران نیشنل ہائی ویز اتھارٹی (این ایچ اے) کے چیئرمین نے خیبر پختونخوا میں اتھارٹی کے منصوبوں کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی۔ انہوں نے بتایا کہ موجودہ حکومت نے کوہاٹ،گمبیلہ روڈ پر کام شروع کیا ہے جو رواں سال مکمل ہوگا جبکہ پرانے بنوں روڈ اور کوہاٹ،پنڈی گھیپ روڈ پر بھی جاری ترقیاتی کام اسی سال مکمل ہوجائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ پرانے بنوں روڈ اور کوہاٹ، پنڈی گھیپ روڈ پر کام کی رفتار تیز کر دی گئی ہے تاکہ یہ منصوبے بروقت مکمل کئے جا سکیں۔ اسی طرح چترال۔شندور روڈ پر بھی کام شروع ہو گیا ہے جبکہ درہ آدم خیل روڈ مکمل ہوچکی ہے۔ بریفنگ میں بتایا گیا کہ چائنہ پاکستان اقتصادی راہداری (سی پیک) کے مغربی روٹ پر گلگت سے چترال ، دیر ، سوات ، پشاور اور ڈی آئی خان سے ژوب، کچلاک تک مکمل کیا جائے گا۔ آئندہ بجٹ میں گلگت۔چترال سڑک شامل کی جارہی ہے، دیر موٹروے ، سوات موٹروے اور پشاور ڈی آئی۔ خان موٹر وے کو بھی سی پیک میں شامل کیا گیاہے جس کی جائنٹ ورکنگ گروپ (جے ڈبلیو جی) نے منظوری دے دی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ سوات موٹر وے کے دوسرے مرحلے پر کام جولائی تک شروع ہوجائے گا جبکہ دیر موٹروے پر کام اسی سال شروع ہوجائے گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ چترال۔آوان۔بامبورہ روڈ پر کام جولائی سے پہلے ہی شروع کردیا جائے گا۔سی پیک کے مغربی روٹ سے پسماندہ علاقوں میں معاشی سرگرمیاں شروع ہوں گی، روزگار کے مواقع پیدا ہوں گے اور پسماندہ علاقوں میں ترقی اور خوشحالی آئے گی۔ مالاکنڈ،دیر،چترال اور سوات کے منصوبوں سے سیاحت کو بھی فروغ ملے گا اور معاشی سرگرمیاں پیدا ہوں گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ اگلے بجٹ میں پشاور نوشہرہ روڈ کو دو لین بنانے کا بھی منصوبہ زیر غور ہے، مالاکنڈ،دیر،چترال اور سوات منصوبوں سے سیاحت کو بھی فروغ ملے گا اور معاشی سرگرمیوں کو فروغ ملے گا۔ این ایچ اے حکام نے مزید بتایا کہ اگلے بجٹ میں پشاور،نوشہرہ روڈ کو دو لین بنانے کا بھی منصوبہ شامل ہے۔ قومی شاہراہوں کے آئندہ بجٹ میں تجویز کردہ اس منصوبے سے نہ صرف ایبٹ آباد کے ٹریفک کے مسائل حل ہوں گے بلکہ مسافت کم ہونے سے مسافروں کی مشکلات میں بھی کمی آئے گی