صوبائی وزیرمال کرنل(ر) ملک محمد انور خان کی نام نہاد اے پی سی میں قومی سلامتی کے اداروں کے خلاف منظممہم کی شدید الفاظ میں مذمت

دنیابھر میں جمہوری قوتیں قومی اداروں اور مسلح افواج کی ہمیشہ غیر مشروط حمایت اور تائید کرتے ہیں کیونکہ ہمیشہ فوج ہی ملک کی حفاظت کی ضامن ہوتی ہے۔ دنیا بھر میں آزادی اظہار اور ابلاغ کی حدودو قیودمتعین ہے

صوبائی وزیرمال کرنل(ر) ملک محمد انور خان کی نام نہاد اے پی سی میں قومی سلامتی کے اداروں کے خلاف منظممہم کی شدید الفاظ میں مذمت

لاہور:سیاسی مخالفت کی آڑ میں فوج مخالف بیانیہ بھارتی ایجنڈے کی تائید ہے۔ جس کا مقصد پاکستان کو اندرونی طور پر کمزور کر کے سی پیک پروجیکٹ کو نقصان پہنچانا ہے۔ یہ بات صوبائی وزیر مال کرنل ( ر) ملک محمدانور خان نے نام نہاد اے پی سی میں قومی سلامتی کے اداروں کے خلاف منظم مہم کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے یہاں جاری اپنے بیان میں کہی۔انہوں نے کہا کہ دنیابھر میں جمہوری قوتیں قومی اداروں اور مسلح افواج کی ہمیشہ غیر مشروط حمایت اور تائید کرتے ہیں کیونکہ ہمیشہ فوج ہی ملک کی حفاظت کی ضامن ہوتی ہے۔ دنیا بھر میں آزادی اظہار اور ابلاغ کی حدودو قیودمتعین ہے۔ جس کا مقصد ففتھ کالمسٹ کی حوصلہ شکنی اور قومی اداروں کی عزت ووقار کو یقینی بنانا ہے۔

انہوں نے کہا کہ مسلح افواج نے ہمیشہ مادرِ وطن کی سلامتی کیلئے لازوال قریانیوں کی داستان رقم کی ہے۔ عالمی طاقتیں پاکستان کو لبیا اور عراق بنانا چاہتی ہیں، مسلح افواج ان کے نا پاک عزائم کی راہ میں واحد رکاوٹ ہیں۔ انہوں نے کہا ہے کہ پاکستان آرمی نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں دشمنوں کو ناکوں چنے چبوائے ہیں۔وطن کی حفاظت کے جذبے سے سرشار فوجی جوان ہمارے کل پر اپنا آج قربان کر رہے ہیں۔ صوبائی وزیر ملک انور خان نے کہا ہے کہ پاکستانی عوام کو مسلح افواج کے خلاف بیانیہ کی سختی سے حوصلہ شکنی کرنا ہو گی۔بھارت ہائبرڈ وار کے ذریعے پاکستان کو اندرونی طور پر تقسیم کرنے میں مصروف ہے۔انہوں نے کہا ہے کہ قومی اداروں پر بلاوجہ تنقید دراصل بھارتی سازشوں کی تکمیل ہے۔سیاسی اور عسکری قیادت کی بہترین حکمت عملی کی بدولت ملک میں امن و امان کی صورتحال میں نمایاں بہتری آئی ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ افغانستان میں پائیدار امن کے قیام میں پاکستان کے لیڈنگ رول کو امریکہ سمیت دنیا بھر نے سراہا ہے۔

پاکستان آرمی کے ملکی دفاع، قومی ترقی اورسماجی و معاشی بھلائی میں ادا کئے گئے کردار کی بدولت پاکستان ترقی کی جانب گامزن ہے۔ ملک انور خان نے کہا ہے کہ پاکستان مخالف بیانات کو ہمیشہ بھارت نے عالمی فورم پر پاکستان کے خلاف استعمال کیا ہے۔ پاکستان مخالف مہم کا مقصد سی پیک پر بھارتی بیانیے کو تقویت دینا ہے۔ صوبائی وزیر نے کہا ہے کہ پاکستانی فوج کی اندرون ملک اور عالمی امن کے قیام کیلئے کاوشوں کی اقوام متحدہ نے ہمیشہ تعریف کی ہے۔انہوں نے کہا ہے کہ پاکستان تاریخ کے دوراہے پر کھڑا ہے، ہمیں فیصلہ کرنا ہو گا کہ ہم ملک کے محافظوں کا ساتھ دیں گے یایونہی غداروں کے ہاتھوں استعمال ہوتے رہیں گے۔انہوں نے کہا ہے کہ پاکستانی میڈیا آزادی اظہار کی آڑ میں فوج مخالف بیانیہ کی پروجیکشن کی پالیسی پر نظر ثانی کرئے۔

سی پیک پاکستان کی تیز رفتار ترقی کی ضمانت ہے، سی پیک کی مخالفت پاکستان کی ترقی کے خلاف سازش ہے۔ صوبائی وزیر مال نے کہا ہے کہ دنیا بھر میں میڈیا قومی امور پر انتہائی ذمہ دار رویے کا مظاہرہ کرتا ہے، پاکستانی ذرائع ابلاغ کو ملک دشمنوں کی پروجیکشن کی پالیسی پر نظر ثانی کرنا ہو گی۔بھارتی میڈیا مفرور مجرم کے فوج مخالف بیانیہ کو خوب اچھال رہا ہے۔ذاتی ایجنڈے کو قومی مفادات پر ترجیح دینے والے کبھی ملک سے مخلص نہیں ہو سکتے۔انہوں نے مزید کہا کہ وزیر اعظم عمران خان کرپٹ ٹولے کے خلاف دن رات نبرد آزما ہیں، انشاء اللہ فتح پی ٹی آئی کی ہو گی۔اپوزیشن کا گٹھ جوڑذاتی مفادات کے تحفظ کیلئے ہے، انہیں عوامی مسائل سے کوئی دلچسپی نہیں۔مفاد پرست ٹولہ آج پھر اپنی کرپشن بچانے کیلئے ایک پیج پر ہے۔عمرانخان نے ملک میں شفافیت اور میرٹ کی سیاست کو فروغ دیا ہے، جو کرپٹ اپوزیشن کیلئے نا قابل قبول ہے۔