چیف سیکرٹری کا ملتان، مظفر گڑھ، راجن پور میں دکانوں پر نرخنامے آویزاں نہ ہونے کا نوٹس، رپورٹ طلب

  سبزیوں،پھلوں کی ارزاں نرخوں پردستیابی کیلئے سہولت بازاروں میں سٹال لگانے کیلئے کسانوں کی حوصلہ افزائی کی جائے، افسران کو ہدایت

 چیف سیکرٹری کا ملتان، مظفر گڑھ، راجن پور میں دکانوں پر نرخنامے آویزاں نہ ہونے کا نوٹس، رپورٹ طلب

لاہور:ملتان، مظفر گڑھ اور راجن پور میں دکانوں پر نرخنامے آویزاں نہ ہونے کا نوٹس لیتے ہوئے چیف سیکرٹری پنجاب نے پرائس کنٹرول اقدامات کی مانیٹرنگ پر مامور سپیشل برانچ اور اربن یونٹ سے تینوں اضلاع سے متعلق رپورٹ طلب کر لی۔ پرائس کنٹرول کے سلسلے میں روزانہ منعقد ہونے والے جائزہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے چیف سیکرٹری پنجاب نے کہا کہ دکانوں پر نرخنامے آویزاں کروا نا انتظامی افسران کی ذمہ داری ہے اور خلاف ورزی کی صورت میں متعلقہ ڈپٹی کمشنر جوابدہ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم اورو زیر اعلیٰ پنجاب کی ہدایت کے مطابق عام آدمی کو مہنگائی سے ریلیف فراہم کرنا اولین ترجیح ہے، اس اہم معاملے پر غفلت  یا کوتاہی کسی صورت بر داشت نہیں کی جا سکتی۔

چیف سیکرٹری نے کہا کہ مختلف شہروں میں سبزیوں اورپھلوں کی قیمتوں میں واضح فرق ہے، زرعی اجناس کی قیمتوں کو کنٹرول کرنے کیلئے منڈیوں میں نیلامی کے روائتی طریقہ کار میں بہتری لانے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے ہدایت کی کہ منڈیوں میں رائج موجودہ نظام کو بہتر بنانے سے متعلق تجاویز بھجوائی جائیں۔انہوں نے افسران کو حکم دیا کہ سہولت بازاروں میں براہ راست سٹال لگانے کیلئے کسانوں کی حوصلہ افزائی کی جائے تاکہ صارفین کو سبزیاں ا ورپھل ارزاں نرخوں پر فراہم کئے جا سکیں۔انہوں نے سہولت بازاروں کیساتھ ساتھ اوپن مارکیٹ میں بھی اشیاء ضروریہ بالخصوص آٹا اور چینی کے معیار، قیمتوں، طلب اور رسد پر کڑی نظر رکھنے سے متعلق ہدایات بھی جاری کیں۔    

ویڈیو لنک کے ذریعے شرکت کرتے ہوئے آئی جی پنجاب نے کہا کہ دیگر جرائم کی طرح ذخیرہ اندوزی کی روک تھام بھی پولیس کے فرائض میں شامل ہے۔ انہوں نے کہا کہ پرائس کنٹرول اقدامات کے سلسلے میں پولیس کی جانب سے انتظامیہ کو مکمل تعاون فراہم کیا جائے گا۔ سیکرٹری صنعت نے اجلاس کو بتایا کہ اشیاء ضروریہ بالخصوص آٹا اور چینی کی مقررہ نرخوں پر دستیابی کیلئے صوبے میں 285سہولت بازاروں کو فعال کر دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ پنجاب کی ہدایت کے مطابق اگلے دو روز میں سہولت بازاروں کی تعداد کو 400تک بڑھا یا جائے گا تاکہ صارفین کو زیادہ سے زیادہ ریلیف فراہم کیا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ پرائس کنٹرول اقدامات کی مانیٹرنگ کیلئے صوبائی حکومت کے سینئر افسران نے اضلاع کے دورے شروع کر دیئے ہیں۔ اجلاس میں سیکرٹری خوراک، سی ای او اربن یونٹ، چیئرمین پی آئی ٹی بی اور کمشنر لاہور نے اجلاس میں شرکت کی جبکہ ڈویژنل کمشنرز، آر پی اوز، ڈپٹی کمشنرز اور ڈی پی اوز ویڈیو لنک کے ذریعے شریک ہوئے۔