عالمی روڈ سائیکلنگ چیمپئن شپ کیلئےاسما جان کی کراچی میں ٹریننگ

عالمی روڈ سائیکلنگ چیمپئن شپ کیلئےاسما جان کی کراچی میں ٹریننگ

کراچی کے علاقے سی ویو کے قریب سڑک پر سائیکل چلاتی خاتون اسما جان کی آنکھوں میں ایک وہ سنہرا خواب ہے جو 80 برس سے تعبیر کا منتظر ہے۔ اسما کے نانا تقسیم ہند سے قبل پنجاب کے چیمپئن سائیکلسٹ تھے، اولمپکس میں بھی برٹش انڈیا کی نمائندگی کرنے والے تھے لیکن دوسری جنگ عظیم کی وجہ سے ان کا خواب پورا نہیں ہوسکا، وہ اولمپئن نہیں بن سکے۔برسوں بعد اب اسما کے پاس یہ موقع ہے کہ وہ اپنے نانا ، مہتا عبدالخالق، کے خواب کو پورا کریں اور ایک بڑے ایونٹ میں ملک کی نمائندگی کریں۔اسما جان کو آئندہ ماہ بلجیئم میں ہونیوالی عالمی روڈ سائیکلنگ چیمپئن شپ کیلئے پاکستان کی چار رکنی ٹیم میں منتخب کیا گیا ہے، اس ٹیم کے دیگر کھلاڑیوں میں کنزہ ملک، خلیل امجد اور علی الیاس شامل ہیں ، کنزہ ملک ان دنوں لاہور میں ٹریننگ کررہی ہیں جبکہ دیگر تین ایتھلیٹس میگا ایونٹ کیلئے خود کو کراچی میں تیار کررہے ہیں۔ان تمام ایتھلیٹس کی نظریں تو عالمی چیمپئن شپ پر مرکوز  ہیں لیکن اسما جان کیلئے اس ایونٹ میں شرکت برسوں پرانے خوابوں کی تعبیر ہے۔اسما نے جیو نیوز کو انٹرویو میں کہا کہ ان کے نانا پنجاب چیمپئن تھے، وہ اولمپکس کیلئے منتخب ہوگئے تھے لیکن عالمی جنگ کی وجہ سے اولمپکس نہ ہوسکے اور وہ اولمپئن نہ بن سکے۔وہ کہتی ہے کہ ان کے نانا کا خواب اب وہ پورا کریں گی اور شاید وہ اس مقام تک ایک خواب کو مکمل کرنے کیلئے ہی پہنچی ہیں۔