وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی ہدایت پر اوورسیز پاکستانیز کمیشن پنجاب کے زیر اہتمام وائس چیئرپرسن اوورسیز پاکستانیز کمیشن پنجاب مخدوم سید طارق محمود الحسن کی قیادت میں دبئی میں اوورسیز کانفرنس کا انعقاد

وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی ہدایت پر اوورسیز پاکستانیز کمیشن پنجاب کے زیر اہتمام وائس چیئرپرسن اوورسیز پاکستانیز کمیشن پنجاب مخدوم سید طارق محمود الحسن کی قیادت میں دبئی میں اوورسیز کانفرنس کا انعقاد

دبئی :۔وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی ہدایت پر اوورسیز پاکستانیز کمیشن پنجاب کے زیر اہتمام وائس چیئرپرسن اوورسیز پاکستانیز کمیشن پنجاب مخدوم سید طارق محمود الحسن کی قیادت میں دبئی میں اوورسیز کانفرنس کا انعقاد کیا گیا۔ کانفرنس کا مقصد اوورسیز پاکستانیوں کے مسائل جاننا، ان کے حقوق کے تحفظ کے حوالے سے بریف کرنا پاکستان میں سرمایہ کاری کے فروغ کےلئے حکمت عملی ترتیب دینا، اوورسیز پاکستانیز کمیشن کے کارکردگی، اوورسیز کو حکومت پاکستان کے نئے اقدامات سے آگاہ کرنا اور دیگر اوورسیز کے مسائل کے حل کیلئے عملی اقدامات کو حتمی شکل دینا تھا۔

 کانفرس میں پاکستان سمیت دنیا بھر میں مقیم پاکستانی تارکین نے اپنے خیالات کا اظہار کیا۔

صوبائی وزیر تعلیم ہائر ایجوکیشن و آئی ٹی راجہ یاسر ہمایوں، صوبائی وزیر صنعت و تجارت میاں اسلم اقبال،ایڈوائزر ٹو چیف منسٹر پنجاب برائے سیاحت آصف محمود  نے بھی کانفرنس سے خطاب کیا اور وائس چیئرپرسن مخدوم سید طارق محمود کے جذبے اور اوورسیز پاکستانیز کمیشن کی نئے اقدامات اور کاوشوں کو سراہا۔

 وائس چیئرپرسن مخدوم سید طارق محمود نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم وزیر اعظم پاکستان عمران خان کے تہہ دل سے مشکور ہیں جنہوں نے الیکٹرانک ووٹنگ مشین کے ذریعے تمام اوورسیز پاکستانیوں کے دل جیت لیے۔یہ اوورسیز پاکستانیوں کی حقیقی فتح ہے۔جس پر میں نوے لاکھ بیرون ممالک مقیم پاکستانیوں کو مبارکباد پیش کرتا ہوں۔

 وائس چئیر پرسن نے مزید کہا کہ وزیراعلیٰ پنجاب کی خصوصی ہدایت پر دبئی ایکسپو میں شرکت کی ہے اور میری کوشش ہے کہ اوورسیز پاکستانیوں کے مسائل سنے جائیں اور اُنہیں اوورسیز پاکستانیز کمیشن کے بارے آگاہی بھی دی جائے۔سید طارق محمود الحسن نے کہا کہ وہ تمام اوورسیز پاکستانیوں کی طرف سے وزیراعظم پاکستان جناب عمران خان کے شکر گزار ہیں جنہوں نے 74سال میں پہلی دفعہ انہیں ووٹ کا حق دلایا۔انہوں نے بتایا کہ او پی سی کے قیام کو سات سال ہوچکے ہیں  اور موجودہ حکومت کے تین سالوں میں کمیشن نے گیارہ ہزار سے زائد شکایات کا ازالہ کیا ہے جو کہ گزشتہ دور کے چار سالوں میں صرف 5 ہزار تھا۔انہوں نے اوورسیز پاکستانیز کمیشن کی کارکردگی پر بات کرتے ہوئے بتایا کہ 2014 سے 2018 تک کیسز حل ہونے کی شرح 37% تھی۔2018 سے 2021 تحریک انصاف کی حکومت میں 63% ہے۔

سید طارق محمود الحسن نے بتایا کہ وزیراعلیٰ پنجاب کی خصوصی رہنمائی سے آنیوالے دنوں میں ٹیوٹا اور سیاحت کے ڈیسک بھی او پی سی میں قائم کیے جارہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے اوورسیز پاکستانیوں کے مسائل کے فوری حل کیلئے تمام وسائل بروئے کار لانے کی ہدایات کی ہیں۔انہوں نے بتایا کہ اس سلسلے میں وزیراعلیٰ پنجاب جناب سردار عثمان بزدار کی خصوصی ہدایت پر پنجاب اوورسیزپاکستانیز کمیشن کے دفتر میں مال خانہ کا افتتاح کیا گیا ہے جہاں سے اوورسیز پاکستانی پنجاب بھر سے اپنی زمین کی فرد یا ملکیتی کاغذات حاصل کرسکتے ہیں۔او پی سی آفس میں نادرا کا کاؤنٹر پہلے سے ہی کام کررہا ہے جہاں اوورسیز پاکستانیوں کیلئے نادرا کی خدمات مہیا کی جارہی ہیں اور اس سلسلے میں جلد ہی اوورسیز پاکستانیوں کیلئے امیگریشن کاؤنٹر یعنی پاسپورٹ آفس بھی قائم کیا جارہا ہے۔وائس چیئرمین اوورسیز کمیشن نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ اوورسیز پاکستانیوں کی سہولت کی خاطر او پی سی نے موبائل ایپلیکیشن بھی لانچ کی ہے جس کا افتتاح خود وزیراعلیٰ پنجاب نے کیا اور اس کا مقصد اوورسیز پاکستانیوں کو خدمات ان کی فنگر ٹپس پر مہیا کرنا ہے۔

سید طارق محمود الحسن نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اوورسیز پاکستانیوں کی سہولت کیلئے ایل ڈی اے میں اسپیشل ریوینیو ڈیسک اور ون ونڈو آپریشن کا قیام بھی عمل میں لایا گیا ہے۔انہوں نے مشرق وسطی میں مقیم اوورسیںز پاکستانیوں کا شکریہ ادا کیا کہ  2021 میں 30 ارب ڈالرز کی ریکارڈ ترسیلات زر اوورسیز پاکستانیوں کی طرف سے موصول ہوئی ہیں جن میں متحدہ عرب امارات اور سعودی عرب میں مقیم اوورسیز پاکستانیوں نے مرکزی کردار ادا کیا ہے کیونکہ انہوں نے سال 2021 کے دوران ریکارڈ $13.77 ارب ڈالرز بھجوائے۔

اس موقع پر برطانیہ، امریکہ، یورپ، پاکستان اور مشرق وسطیٰ میں مقیم اوورسیز پاکستانیوں سمیت دیگر سیاسی و سماجی تنظیموں کے رہنماؤں، وکلا، تجزیہ نگاروں اورسینئر صحافیوں نے شرکت کی۔