اتنا بڑا شہابِ ثاقب تیزی سے زمین کی طرف بڑھنے لگا کہ ماہرین نے دنیا کو خبردار کردیا

اتنا بڑا شہابِ ثاقب تیزی سے زمین کی طرف بڑھنے لگا کہ ماہرین نے دنیا کو خبردار کردیا

نیویارک:زمین پر شہابیوں کا گرنا کوئی نئی بات نہیں مگر اب ایک اتنا بڑا شہاب ثاقب زمین کی طرف آ رہا ہے کہ امریکی خلائی تحقیقاتی ادارے ناسا نے دنیا کو اس کے حوالے سے متنبہ کر دیا ہے۔ ذرائع کے مطابق ناسا کے ماہرین نے بتایا ہے کہ اس شہاب ثاقب کا سائز فرانس کے ایفل ٹاور کی بلندی کے برابر ہے اور یہ تیزی سے زمین کی طرف آ رہا ہے۔یہ شہابیہ زمین سے 24لاکھ میل کے فاصلے سے گزرے گا۔

 ماہرین کے مطابق حجم میں یہ شہاب ثاقب فٹ بال کے تین میدانوں کے برابر ہے۔ یہ شہابیہ 11دسمبر کے روز زمین سے چوبیس لاکھ میل کے فاصلے سے 4ہزار میل فی گھنٹہ کی رفتار سے گزرے گا۔ اس سے اگرچہ انسانوں اور ہماری زمین کو کوئی خطرہ نہیں ہے مگر پھر بھی اس سے متنبہ رہنے کی ضرورت ہے۔ ماہرین کی طرف سے اس شہاب ثاقب کو 4660 Nereusکا نام دیا گیا ہے۔ یہ شہابیہ سورج کے گرد 664دنوں میں ایک چکر مکمل کرتا ہے اور اگلے 175سالوں میں 12مرتبہ زمین کے پاس سے گزرے گا۔ اگلی بار یہ مارچ 2031اور پھر نومبر 2050ء میں زمین کے قریب ترین آئے گا۔