حکومت نےشجرکاری میں خاطر خواہ اظافہ اورجنگلات کی ترقی کیلیے عملی اقدامات کیے : صوبائی وزیر جنگلات محمد سبطین خان

صوبہ کو سرسبز وشاداب بنانے کی غرض سے تمام تر وسائل کو بروئے کار لایا جا رہا ہیماحولیاتی آلودگی کو کنٹرول کرنے کے پیش نظر شجرکاری میں خاطر خواہ اظافہ نا گزیر ہے عوام کو صاف شفاف ماحول فراہم کرنا اولین ترجیحات میں شامل

حکومت نےشجرکاری میں خاطر خواہ اظافہ اورجنگلات کی ترقی کیلیے عملی اقدامات کیے : صوبائی وزیر جنگلات محمد سبطین خان

لاہور:صوبائی وزیر جنگلات محمد سبطین خان نے کہہ ہے کہ حکومت کی جانب سیشجرکاری میں خاطر خواہ اظافہ اورجنگلات کی ترقی کیلیے عملی اقدامات کیے جارہے ہیں. صوبہ کو سرسبز وشاداب بنانے کی غرض سے تمام تر وسائل کو بروئے کار لایا جا رہا ہیماحولیاتی آلودگی کو کنٹرول کرنے کے پیش نظر شجرکاری میں خاطر خواہ اظافہ نا گزیر ہے عوام کو صاف شفاف ماحول فراہم کرنا اولین ترجیحات میں شامل  وزیر اعظم اور وزیر اعلی پنجاب کے ویژن کے مطابق جنگلات کی ترقی کے لیے عملی اقدامات کیے جا رہے ہی ان خیالات کا اظہار آج انہوں نے صدر یونیورسٹی آف مینجمنٹ اینڈ ٹیکنالوجی ابراہیم حسن مراد کی قیادت میں آئے ایک وفد سے ملاقات کے موقع پر کیا.

انہوں نے جنگلات کی ترقی و بحالی میں یو ایم ٹی کی جانب سے دلچسپی کے اظہار کو خوش آئند قرار دیا اور کہہ کہ نوجوان نسل کو شجرکاری کی اہمیت بارے آگاہی دینا وقت کی اہم ضرورت ہے. وزیر جنگلات پنجاب محمد سبطین خان سے آج صدر یو ایم ٹی ابراہیم حسن مرادکی قیادت میں یونیورسٹی سے آئے ایک وفد نیملاقات کی. ملاقات میں یو ایم ٹی شعبہ فوڈ اینڈ ٹیکنالوجی کے ڈائریکٹر ڈاکٹر نعمان,چیف ایڈوائزر صدر یو ایم ٹی جنرل جاوید حسن (ر) اور چیف کنزرویٹر جنگلات اعجاز حسین شیراذی بھی موجود تھے۔ملاقات میں محکمہ جنگلات میں جدید اصلاحات متعارف کروانے اور باہمی دلچسی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا. ڈاکٹرنعمان نے وزیر جنگلات کو تفصیلی پریزنٹیشن دی اور بتایا کہ کس طرح یو ایم ٹی شعبہ جنگلات کی ترقی و بہتری میں اہم کردار ادا کر سکتی ہے۔

اس دوران جنگلات کی ترکی کے حوالے سی یو ایم ٹی اور وزارت جنگلات کے باہمی تعاون سے ریسرچ سینٹر کے قیام پر غور کیا گیا. ڈاکٹر نعمان نے وزیر جنگلات کو بتایا کہ یو ایم ٹی شعبہ جنگلات کے حوالے سے فپوریسٹ اور سویٹرشپ کونسل کے ماڈلز تیار کریگی اور ریسرچ کے ذریعے کمیونٹی کی ڈویلپمنٹ میں اہم کردار ادا کریگی اور پیش کش کی کہ وزارت جنگلات کے باہمی تعاون سے نجی سطح پر یو ایم ٹی بوٹینیکل اور زولوجیکل گارڈن بنانے میں اہم کردار ادا کر سکتی ہے. گفتگومیں یونیورسٹی آف مینجمنٹ اینڈ ٹیکنالوجی اور محکمہ جنگلات کے اشتراک سے لکڑی کی سرٹیفیکیشن سے متعلق منصوبہ کے قیام پر بھی اتفاق ہوا اس کے علاوہ یو ایم ٹی اور محکمہ جنگلات پنجاب کے اشتراک سے صوبہ میں عالمی معیار کی تین نرسریز کے قیام کا فیصلہ بھی کیا گیا جبکہ نرسریوں کے قیام اور ٹیکنیکل معاملات پر بین الاقوامی ماہرین سے خدمات حاصل کرنے پر بھی غور کیا گیا.

اس موقع پر حاضرین سے خطاب کرتے ہوئے وزیر جنگلات نے کہہ کہ موجودہ اور آنے والی نسلوں کو صاف شفاف ماحول فراہم کرنے کی غرض سے عملی اقدامات کیے جا رہے ہیں.سبز انقلاب لانے تک چین سے نہیں بیٹھیں گے انشائاللہ بہت جلد عوام جنگلات کے شعبہ میں نمایاں تبدیلیاں دیکھیں گے عوام میں شجر کاری کا شعور پیدا کرنا وقت کی ضرورت ہے ہر شہری کو چاہیے کہ اپنے اردگرد ماحول کو سرسبز بنانے کے لیے اپنے حصہ کا پودہ لگائے۔