لاہور: 72سالہ بزرگ شہری نذیر احمدکے قتل کا ڈراپ سین، بیٹا اور بہو ہی قاتل نکلے: ایس پی سٹی انویسٹی گیشن توحید الرحمن میمن

بیٹے ارشد نے اپنی بیوی کرن کے ہمراہ تقریباً ڈیڑھ ماہ قبل سگے باپ کوتشدد کرکے قتل کر دیا تھا۔ بیٹے نے اپنی بیوی کرن سے معمولی گھریلو ناچاقی کی رنجش پر سگے باپ نذیر احمد کوقتل کیا

لاہور: 72سالہ بزرگ شہری نذیر احمدکے قتل کا ڈراپ سین، بیٹا اور بہو ہی قاتل نکلے: ایس پی سٹی انویسٹی گیشن توحید الرحمن میمن

لاہور(دانش خان ) ایس پی سٹی انویسٹی گیشن توحید الرحمن میمن کی سربراہی میں شفیق آباد پولیس کی کارروائی۔ 72سالہ بزرگ شہری نذیر احمدکے اندھے قتل کی واردات کا ڈراپ سین، بیٹا اور بہو ہی قاتل نکلے۔ بیٹے ارشد نے اپنی بیوی کرن کے ہمراہ تقریباً ڈیڑھ ماہ قبل سگے باپ کوتشدد کرکے قتل کر دیا تھا۔ بیٹے نے اپنی بیوی کرن سے معمولی گھریلو ناچاقی کی رنجش پر سگے باپ نذیر احمد کوقتل کیا۔ ملزمان نے نعش بوری میں بند کر کے2روز تک چھت پر رکھنے کے بعد گھر کے قریب خالی پلاٹ میں پھینک دی تھی۔

بیٹے ارشد نے باپ کی نعش کو پلاٹ میں پھینکنے کے لیے بیوی کے آشنا خرم شہزادعرف عباس کی مدد حاصل کی تھی۔ اغواء کے بعد قتل کی واردات کا ڈرامہ رچانے کے لیے بیٹے ارشد نے اپنی مدعیت میں اغواء کا مقدمہ درج کروا یاتھا۔ ملزمان بیٹے اور بہو کی نشاندہی پر آلہ قتل ڈنڈا، خون آلود کپڑے اور موٹر سائیکل برآمد کر لی گئی۔ انچارج انویسٹی گیشن شفیق آباد نثار احمدنے اپنی ٹیم کے ہمراہ ملزمان کو جدید طریقہ تفتیش کی مدد سے گرفتارکیا۔ ایس ایس پی انویسٹی گیشن ذیشان اصغر کا قتل کے ملزمان کی گرفتاری پر پولیس ٹیم کے لیے تعریفی اسناد کا اعلان۔