حکومت پنجاب صحت پر سمجھوتے کے بغیر روزگار کی بحالی کو یقینی بنا رہی ہے: میاں خالد محمود

بھٹوں کی بندش سے صرف مالکان متاثر نہیں ہوں بلکہ تعمیراتی صنعت سے منسلک لاکھوں لوگوں کا کاروبار اور روزانہ اجرت پر کام کرنے والا مزدور طبقہ بھی متاثر ہو گا: صوبائی وزیر برائے قدرتی آفات

 حکومت پنجاب صحت پر سمجھوتے کے بغیر روزگار کی بحالی کو یقینی بنا رہی ہے: میاں خالد محمود

لاہور:  حکومت پنجاب صحت پر سمجھوتے کے بغیر روزگار کی بحالی کو یقینی بنا رہی ہے۔ بھٹوں کی بندش سے صرف مالکان متاثر نہیں ہوں بلکہ تعمیراتی صنعت سے منسلک لاکھوں لوگوں کا کاروبار اور روزانہ اجرت پر کام کرنے والا مزدور طبقہ بھی متاثر ہو گا۔ بھٹہ مالکان زگ زیگ سے بہتر ماحول دوست ٹیکنالوجی متعارف کروا سکتے ہیں تو معائنے کے لیے تیار ہیں۔ نئی ٹیکنالوجی کے کامیاب تجربات تک ضروری ہے کہ زگ زیگ ٹیکنالوجی پرمنتقلی کے حوالے سے اینوائرمنٹ کمیشن کی سفارشات اور عدالتی احکامات کی پابندی کو یقینی بنایا جائے۔ مضر صحت دھواں چھوڑنے والے بھٹوں کے خلاف کاروائیوں میں پنجاب ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی محض اپنے فرائض کی انجام دہی کو یقینی بنا رہی ہے۔

ان خیلات کا اظہار صوبائی وزیر برائے قدرتی آفات میاں خالد محمود نے آج پنجاب ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی میں بھٹہ مالکان کے وفد سے ملاقات کے دوران کیا۔ اس موقع پر ان کے ہمراہ صوبائی وزیر برائے محصولات ملک انور، ڈی جی پنجاب ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی راجا خرم شہزاد عمر، ڈی جی ماحولیات ڈاکٹر خرم شہزاد بھی شریک تھے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ کورونا کے دوران ماحولیاتی آلودگی پر کنٹرول پہلے سے کہیں زیادہ ضروری ہے۔

بھٹہ مالکان اپنے سے جڑے لاکھوں مزدوروں اور کاروباری حضرات کے روزگارکو بحال رکھنے کے لیے محفوظ راستہ اختیار کریں۔ انہوں نے کہا کہ زگ زیگ ٹیکنالوجی اب تک کی ت حقیق کے مطابق بھٹوں کی تعمیر کا سب سے کم خرچ اور ماحول دوست طریقہ ہے۔ بھٹہ مالکان کے تحفظات کی دوری کے لیے دیگر مجوزہ طریقوں کی محکمہ ماحولیات سے منظوری اور کامیاب تجربات کے بعدحکومت پنجاب کی جانب سے ہر ممکن تعاون کو یقینی بنایا جائے گا۔

بھٹہ مالکان کی جانب سے شکایت کی گئی تھی کہ زگ زیگ ٹیکنالوجی بھٹوں میں اینٹوں کی پیداوار اور معیار کو متاثر کر رہی ہے۔ ڈی جی پنجاب ڈیزاسٹر مینجمنٹ نے صوبائی وزراء کو بتایا کہ اس سے قبل کسی بھٹے کی جانب سے ایسی کوئی شکایت موصول نہیں ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی اینوائر منٹ کمیشن اورعدالتی احکامات کے مطابق کاروائیوں کی پابند ہے۔بھٹہ مالکان محکمہ ماحولیات کو تحفظات سے آگاہ کریں۔ جو کچھ اتھارٹی کے دائرہ اختیار میں ہے اس پر بھٹہ مالکان کے ساتھ مکمل تعاون کیا جائے گا۔