ٹیکسٹائلز کے شعبہ میں جدید ٹیکنالوجی سے استفادہ کے لیے بھاری سرمایہ کاری ، مارچ کے دوران مشینری کی درآمدات میں 86 فیصد اضافہ ہوا ، ادارہ برائے شماریات

ٹیکسٹائلز کے شعبہ میں جدید ٹیکنالوجی سے استفادہ کے لیے بھاری سرمایہ کاری ، مارچ کے دوران مشینری کی درآمدات میں 86 فیصد اضافہ ہوا ، ادارہ برائے شماریات

اسلام آباد :ٹیکسٹائلز کے شعبہ میں جدید ٹیکنالوجی سے استفادہ کے لیے بھاری سرمایہ کاری کی جا رہی ہے۔ جدید ترین ٹیکنالوجیز سے استفادہ سے شعبہ کی ویلیو ایڈیشن اور پیداوار میں اضافہ ہوگا۔ وفاقی ادارہ برائے شماریات پاکستان (پی بی ایس) کے اعدادوشمار کے مطابق مارچ 2021 کے دوران ٹیکسٹائل مشینری کی درآمدات میں 86 فیصد سے زیادہ اضافہ ہوا ہے۔

مارچ 2020 میں درآمدات کا حجم 29.9 ملین ڈالر رہا تھا تاہم مارچ 2021 کے دوران درآمدات کی مالیت 55.7 ملین ڈالر تک پہنچ گئی۔ اس طرح مارچ 2020 کے مقابلہ میں مارچ 2021 کے دوران ٹیکسٹائل مشینری کی قومی درآمدات میں 25.8 ملین ڈالر یعنی 86.5 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔ ٹیکسٹائل کی قومی صنعت کی ایسوسی ایشن (اپٹما) کے حکام نے کہا ہے کہ برآمدات کے فروغ کے لیے حکومت نے برآمدی شعبہ جات کے لیے مختلف مراعات کا فیصلہ کیا تھا جس کے نتیجہ میں جاری مالی سال کے دوران شعبہ کی برآمدات میں خاطر خواہ اضافہ ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ٹیکسٹائل کی صنعت کے پاس بڑی تعداد میں برآمدی آرڈرز موجود ہیں اور شعبہ اپنی پیداواری صلاحیتوں سے بھرپور انداز میں استفادہ کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی مارکیٹ کی ضروریات اور طلب کے مطابق مصنوعات کی تیاری اور ویلیو ایڈیشن کے حوالہ سے شعبہ میں سرمایہ کاری کا عمل جاری ہے۔

اسی طرح پیداواری صلاحیتوں میں اضافہ اور ان کو جدید خطوط پر استوار کرنے کے لیے ٹیکسٹائل کا شعبہ جدید ترین ٹیکنالوجیز کی حامل مشینری پر بھی بھاری سرمایہ کاری کر رہا ہے اور یہی وجہ ہے کہ مارچ 2020 کے مقابلہ میں مارچ 2021 کے دوران ٹیکسٹائل مشینری کی قومی برآمدات میں 86 فیصد سے زیادہ اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے