ریاض میں سیاحت کی بحالی کے موضوع پر خطے کے سیاحتی سربراہان کی کانفرنس شروع،سعودی حکومت کا سوملین ڈالر فنڈ دینے کا اعلان

ریاض میں سیاحت کی بحالی کے موضوع پر خطے کے سیاحتی سربراہان کی کانفرنس شروع،سعودی حکومت کا سوملین ڈالر فنڈ دینے کا اعلان

ریاض:سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض میں سیاحت کی بحالی کے موضوع پر خطے کے سیاحتی سربراہان کی کانفرنس شروع ہوگئی،سعودی حکومت نے سوملین ڈالر فنڈ دینے کا اعلان کیا ہے۔

سعودی نشریاتی ادارےکے مطابق ریاض میں سیاحت کی بحالی کے موضوع پر ہونے والی کانفرنس میں سعودی وزیر سیاحت احمد الخطیب نےخطاب کرتے ہوئے کہا کہ عالمی سیاحت کے شعبے میں تبدیلیاں اور بحرانوں سے نمٹنے کے لیے سیاحت کے شعبے کو زیادہ لچکدار اور ٹھوس موقف اختیار کرنا ہوگا۔

انہو ں نے کہا کہ یہ فنڈ افرادی و ادارہ جاتی استعداد بڑھانے والی سکیموں میں حصہ لے گا اور یہ سیاحت کے شعبے کی ترقی کے حوالے سے اپنی نوعیت کا پہلا اقدام ہے۔ احمد الخطیب کا کہنا تھا کہ عالمی سیاحت کو اس طرح استوار اور توانا ہوناچاہیے کہ وہ کورونا وائرس جیسے بحرانوں کے مقابلے میں لچک کا مظاہرہ کرسکے۔

انھوں نے بتایا کہ پچھلے 14 ماہ کے دوران ہم سیاحت کے شعبے میں دنیا بھر میں 6 کروڑ ملازمتیں کھوچکے ، ہزاروں چھوٹے اور بڑے کاروبار بند ہوچکے یا ان کی کاروباری سرگرمیاں معطل ہوکررہ گئی ہیں اور ان تمام کاروباروں کا تعلق نجی شعبے سے ہے۔سعودی وزیرسیاحت نے کہا کہ موجودہ حالات میں ہمیں ایک مشترکہ ٹریول پروٹوکول تیار کرنا چاہیے۔

اس موقع پر عالمی تنظیم سیاحت نے ریاض میں ریجنل آفس کے افتتاح کا بھی اعلان کیا۔یہ مشرق وسطی ٰکے تیرہ ملکوں کے درمیان سیاحتی پالیسی اور پروگراموں کو فروغ جبکہ صحت کے حوالے سے پالیسی متعین کرنے کی کوشش کرے گا۔ سعودی عرب نے اعلان کیا کہ وہ عالمی فنڈ برائے سیاحت کی مد میں سو ملین ڈالر دے گا۔

یہ عالمی بینک کے تعاون سے عالمی سیاحت کو فروغ دینے والا پہلا فنڈ ہوگا۔ عالمی تنظیم سیاحت نے ریاض میں پہلی سیاحتی اکیڈمی قائم کرنے کا بھی اعلان کیا ، یہ مشرق وسطیٰ علاقے کے لیے مخصوص ہوگی