کرونا وباء کے معاملے میں سیاست نہ کی جائے اگر احتیاط نہ کی تو پاکستان کے معاشی اور سماجی حالات مزید بگڑ سکتے ہیں

مرکزی علماء کونسل پاکستان نے کرونا کی دوسری لہر میں عوام کو محتاط رہنے کے اپیل کردی

کرونا وباء کے معاملے میں سیاست نہ کی جائے اگر احتیاط نہ کی تو پاکستان کے معاشی اور سماجی حالات مزید بگڑ سکتے ہیں

چیئرمین مرکزی علماء کونسل پاکستان سیکرٹری جنرل انٹرنیشنل ختم نبوت موومنٹ پاکستان صاحبزادہ زاہد محمود قاسمی نے مرکزی جامع مسجد گول میں جمعہ کے اجتماع میں عوام سے اپیل کی ہے کہ کرونا سے پیدا ہونے والی دوسری لہر توجہ طلب اور تشویش ناک ہے وباء کے تازہ اثرات و نتائج اور اعداد و شمار کی روشنی میں دیکھے جائیں تو محسوس ہوتا ہے کہ ملک وبائی مرض کی گرفت میں ہے اس لئے مرض کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے طبی ماہرین کی جانب سے جاری کردہ حفاظتی تدابیر اور ہدایات پر عمل درآمد نا گزیز ہے ہر شہری کو احتیاط کا دامن پکڑنا چاہئے قوم احتیاط کے ساتھ ساتھ مسنون حفاظتی دعاؤں کا بھی خاص اہتمام کرے انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ جلد از جلد عوام تک سستی اور معیاری ادویات کی فراہمی کو ممکن بنایا جائے اور ملک کے تمام ہسپتالوں میں علاج و معالجہ کو فری کیا جائے آزمائش کی موجودہ گھڑی میں ہمیں احتیاط سے کام لینا ہو گا۔

تمام طبقات کو متحد ہو کر اس بحران سے نکلنے کی کوشش کرنا ہو گی اتفاق رائے سے احتیاطی تدابیر کا لائحہ عمل تیار کیا جائے تاکہ منظم انداز میں در پیش خطرات کا تدارک ممکن ہو سکے کرونا کے بڑھتے ہوئے خطرات کے تناظر میں حکومت اور اپوزیشن کا ایک دوسرے کو مورد الزام ٹھہرانا اور بیماری اور اموات پر سیاست کرنا باعث تفکر ہے اس وقت حالیہ وباء نے ہر شعبے کو لپیٹ میں لے رکھا ہے اور ملک کاہر طبقہ متاثر اور پریشان ہے ایسے میں تعلیم کاشعبہ جو پہلے ہی ناگفتہ بہی صورت حال کا شکار ہے مزید بے یقینی اور بے نظمی سے دو چار ہے۔ملک کے تمام طبقات میں تعلیمی و تدریسی عمل کو آن لائن جاری رکھنا محدود طبقے کیلئے تو ممکن ہے مگر عام عوام الناس جدید وسائل کی عدم دستیابی کی صورت میں بے حدمشکلات کا شکار ہیں ملک کا بہت بڑا حصہ ایسا بھی ہے جہاں انٹرنیٹ دستیاب ہی نہیں وہاں مواصلاتی آن لائن تعلیم کو کیسے ممکن بنایا جاسکے گابحیثیت مسلمان ہم خوف و ہراس اور بے تدبیری اور بے یقینی کی بجائے اللہ رب العزت کی ذات پر اعتماد اور توکل کو بڑھائیں اسلام زمینی و سماوی مصائب و بلیات کے نزول پر توبہ اور رجوع الی اللہ کے اہتمام کا درس دیتا ہے