ستائیس اکتوبر1947 کو بھارت نے کشمیری عوام کی امنگوں اور آرزوئوں کا گلا گھونٹتے ہوئے غیرقانونی طورپر جموں وکشمیر پرقبضہ کیا تھا،مخدوم شاہ محمود قریشی

ستائیس اکتوبر1947 کو بھارت نے کشمیری عوام کی امنگوں اور آرزوئوں کا گلا گھونٹتے ہوئے غیرقانونی طورپر جموں وکشمیر پرقبضہ کیا تھا،مخدوم شاہ محمود قریشی

اسلام آباد :وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ 27 اکتوبر1947 کشمیریوں کے لئے ایک تاریک ترین دن کی حیثیت رکھتا ہے، اس روز اپنے مستقبل کا خود فیصلہ کرنے کی کشمیری عوام کی امنگوں اور آرزوئوں کا گلا گھونٹتے ہوئے بھارت نے غیرقانونی طورپر جموں وکشمیر پرقبضہ کیا تھا، اس غیرقانونی اقدام کی زہرناکی اور دھوکہ دہی کی کڑوی یاد انسانیت کے ضمیر کو اب تک کچوکے لگا رہی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے یوم سیاہ پر اپنے ایک پیغام میں کیا۔

انہوں نے کہا کہ غیرقانونی طورپر بھارت کے زیرقبضہ جموں وکشمیر کے عوام نے لامتناہی مظالم کا بہادری اور جرات سے سامنا کیا ہے۔ قابض افواج کی بدترین سفاکی اور ظلم بھارتی جبرواستبداد سے نجات کے کشمیریوں کے عزم کو متزلزل نہیں کرسکا۔ انہوں نے کہا کہ بھارت میں برسراقتدار ”بی جے پی” اور آر ایس ایس” نے مل کر کشمیریوں پر ظلم وجبر میںکون ئی انتہائوں پر پہنچایا۔

کشمیری مسلسل محاصرے میں ہیں، ان کی قیادت پابند سلاسل ہے اور ان کے نوجوانوں کو ”چھاپوں اور تلاشی” کی کارروائیوں کی آڑ میں مسلسل نشانہ بنایاجارہا ہے۔ تہہ بہ تہہ لاک ڈائون اور انسانی حقوق کی سنگین پامالیوں کے باوجود کشمیریوں کی مقامی جدوجہد کو دبایا نہیں جاسکا جس میں ہزاروں کشمیری جام شہادت نوش کرچکے ہیں اور اس جدوجہد میں انہوں نے اپنی جانوں کے عظیم نذرانے پیش کئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بھارت نے نہ صرف جموں وکشمیر سے متعلق اپنی ذمہ داریوں سے راہ فرار اختیار کی بلکہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں سے مکرتے ہوئے کثیرالقومیت کو بھی موم کی ناک بنا کر اس کی دھجیاں اڑائیں۔ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ 5 اگست 2019 کے یک طرفہ اور غیرقانونی اقدامات اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں اور عالمی قانون کی کھلی خلاف ورزی ہیں۔

بھارت کشمیریوں کا عزم مجروح کرنے اور انہیں خاموش کرانے کے لئے متنازعہ خطے میں آبادی کے تناسب میں تبدیلی اور اپنے غیرقانونی قبضے کو دوام دینے کی مذموم کوششیں کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تنازعہ جموں وکشمیر کا حل اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرارداوں اور کشمیریوں کی خواہشات اور امنگوں کے مطابق ہونے تک جنوبی ایشیاء اور دنیا میں امن واستحکام کا خواب ادھورا رہے گا۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ بھارت کو سمجھنا ہوگا کہ جبر واستبداد اور طاقت کے زور پر وہ کشمیریوں کی آزادی کی جدوجہد کو دبا نہیں سکتا۔ حقیقت یہ ہے کہ بھارتی بے رحمی، جبر واستبداد کے نتیجے میں اپنی منصفانہ جدوجہد کے لئے کشمیریوں کا آہنی عزم مزید مضبوط اور پختہ ہوا ہے۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ پاکستان بھارتی جبرواستبداد سے دنیا کو مسلسل آگاہ اور بھارت میں بڑھتی ہوئی عدم برداشت سے خبردار کرتا آرہا ہے۔ برسراقتدار موجودہ دورحکومت میں بھارت میں مسلمانوں کو خوف کی علامت بنا کربدنام کیاگیا،مسلمانوں سمیت دیگر اقلیتوں اور نچلی ذات کے لوگوں کو مظالم کا نشانہ بنایاجارہا ہے اور ان سے امتازی سلوک روا ہے۔

غیرقانونی طورپر بھارت کے زیرقبضہ جموں وکشمیر میں ناقابل تصور غیرانسانی طرز عمل بھارتی حکومت کے مسلمانوں اور دیگر غیرہندو اقلیتوں کے لئے نفرت کے اظہار کا بین ثبوت ہے۔

پاکستان نے بھارتی مظالم اور مذموم عزائم کے بارے میں ناقابل تردید شواہد اور ثبوت دنیا کے سامنے بار بار پیش کئے ہیں اور اس ضمن میں حال ہی میں ”غیرقانونی طورپر بھارت کے زیرقبضہ جموں وکشمیر میں بھارت کی جانب سے انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں” پر مبنی ڈوزئیر 12 ستمبر 2021 کو پیش کیاگیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ عالمی برادری غیرقانونی طورپر بھارت کے زیرقبضہ جموں وکشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین پامالیوں کو روکے۔ عالمی سول سوسائیٹی اور میڈیا نے بھی نہتے اور مظلوم کشمیریوں کی حالت زار کو بے نقاب کیا ہے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں ہم پاکستانی اپنے اس عزم کا اعادہ کرتے ہیں کہ ہم اپنے کشمیری بھائیوں اور بہنوں کے ساتھ یک جہتی کا اظہار کرتے ہوئے ان کے ساتھ ہیں۔

ہم اس وقت تک اْن کا ساتھ دیتے رہیں گے جب تک اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں اور کشمیریوں کی امنگوں کے مطابق یہ تنازعہ حتمی طور پر حل نہیں ہوجاتا۔