سردار محمد آصف نکئی کا عاشورہ محرم کے دوران ضلعی انتظامیہ قصور کی جانب سے ترتیب دیے گئے حتمی سکیورٹی پلان کا جائزہ

سیکیورٹی پلان کے مطابق تین ہزار پولیس اہلکار،263 رضاکار، 150 سول ڈیفنس اہلکار، محافظ فورس اور ایلیٹ فورس کے جوان نویں اور دسویں محرم کو ڈیوٹی سر انجام دیں گے : وزیر مواصلات و تعمیرات

سردار محمد آصف نکئی کا عاشورہ محرم کے دوران ضلعی انتظامیہ قصور کی جانب سے ترتیب دیے گئے حتمی سکیورٹی پلان کا جائزہ

لاہور :وزیر مواصلات و تعمیرات سردار محمد آصف نکئی نے عاشورہ محرم کے دوران ضلعی انتظامیہ قصور کی جانب سے ترتیب دیے گئے حتمی سکیورٹی پلان کا جائزہ لیا۔انہوں نے ضلعی انتظامیہ کے مرتب کیے گئے حفاظتی اقدامات پر اطمینان کا اظہار کیا۔ سیکیورٹی پلان کے مطابق تین ہزار پولیس اہلکار،263 رضاکار، 150 سول ڈیفنس اہلکار، محافظ فورس اور ایلیٹ فورس کے جوان نویں اور دسویں محرم کو ڈیوٹی سر انجام دیں گے۔ علاوہ ازیں رینجرز اور پاکستان آرمی کے جوان بھی سکیورٹی انتظامات میں ضلعی انتظامیہ کے شانہ بشانہ ہوں گے۔

سردار آصف محمد نکئی کا کہنا ہے کہ عاشورا محرم کے دوران قصور میں جلوسوں کے راستے کی نگرانی سی سی ٹی وی کیمروں کے ذریعے کی جائے گی نیز جلوس میں شریک ہونے والے افراد کو واک تھرو گیٹس کے ذریعے جلوس میں شامل ہونے کی اجازت دی جائے گی۔ مانیٹرنگ کے نظام کو مزید فعال کرنے کے لئے ڈی پی او آفس قصور میں ایک مانیٹرنگ روم قائم کر دیا گیا ہے۔ نویں اور دسویں محرم کے دوران شہر میں دفع 144 کے تحت ڈبل سواری پر پابندی ہوگی۔

وزیر مواصلات و تعمیرات نے جلوس میں شرکت کرنے والے عزاداروں سے درخواست کی ہے کہ ضلعی انتظامیہ کے حفاظتی اقدامات کو مزید فول پروف بنانے کے لئے وہ بھی انفرادی طور پر اپنا کردار ادا کریں اور حفاظت پر مامور پولیس اہلکاروں کے ساتھ تعاون کریں تاکہ جلوس میں شریک تمام افراد کی حفاظت کو یقینی بنایا جا سکے۔