چائلڈ پروٹیکشن بیورو میں چائلڈ اٹینڈنٹ کی پوسٹ کو ترجیحی بنیادوں پر اَپ گریڈ کیا جائے: مخدوم ہاشم جواں بخت

لاوارث اور معذور بچوں کی نگہداشت، تعلیم اور تربیت پر مامور عملہ کی بھرتی کے لیے نفسیاتی معائنے کو لازمی قرار دیا جائے۔ کمزور بچوں کو معاشرے کا کارآمد شہری بنانے کے لیے ضروری ہے کہ ان کی پرورش محفوظ ہاتھوں میں ہو: وزیر خزانہ پنجاب

چائلڈ پروٹیکشن بیورو میں چائلڈ اٹینڈنٹ کی پوسٹ کو ترجیحی بنیادوں پر اَپ گریڈ کیا جائے: مخدوم ہاشم جواں بخت

لاہور: چائلڈ پروٹیکشن بیورو میں چائلڈ اٹینڈنٹ کی پوسٹ کو ترجیحی بنیادوں پر اَپ گریڈ کیا جائے۔ لاوارث اور معذور بچوں کی نگہداشت، تعلیم اور تربیت پر مامور عملہ کی بھرتی کے لیے نفسیاتی معائنے کو لازمی قرار دیا جائے۔ کمزور بچوں کو معاشرے کا کارآمد شہری بنانے کے لیے ضروری ہے کہ ان کی پرورش محفوظ ہاتھوں میں ہو۔ اس مقصد کے لیے محکمہ سوشل ویلفیئر، چائلڈ پروٹیکشن بیورواور سوشل پروٹیکشن اتھارٹی مل کر کام کریں۔ اداروں کی استعداد کار میں اضافے کے لیے این جی اوز کی خدمات لی جائیں۔یہ ہدایات وزیر خزانہ پنجاب مخدوم ہاشم جواں بخت نے آج وزیر اعلیٰ سیکرٹریٹ میں کابینہ کی سٹینڈنگ کمیٹی برائے فنانس اینڈ ڈویلپمنٹ کے 40ویں اجلاس کی صدارت کے دوران دیں۔

اجلاس کے دیگر شرکاء میں صوبائی وزیر برائے صنعت و تجارت میاں اسلم اقبال، وزیر برائے توانائی ڈاکٹر اختر ملک، مشیر وزیر اعلیٰ برائے اقتصادی امور ڈاکٹر سلمان شاہ، سیکرٹری خزانہ عبداللہ سنبل، چیئرمین پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ شیخ حامد یعقوب کے علاوہ متعلقہ محکموں کے سیکرٹری صاحبان نے شامل تھے۔اجلاس میں 17 نکاتی ایجنڈہ زیر بحث لایا گیا جس کے تحت چائلڈ پروٹیکشن بیورواینڈ ویلفیئر میں 1 سے 15 سکیل تک بھرتیوں سے پابندی کے خاتمے گرلز ماڈل سکول عیسیٰ خیل میانوالی سکیم کی سالانہ ترقیاتی پروگرام میں شمولیت اور تعمیر کے لیے فنڈز کی منظوری دی گئی۔

محکمہ کھیل و امور نوجوانان کے تحت والی بال ایسوسی ایشن کے لیے خصوصی گرانٹ اور کورونا کے دوران ٹورازم ڈیپارٹمنٹ کارپوریشن پنجاب کے مالی مسائل کے حل کے لیے قابل واپسی گرانٹ منظور کی گئی۔ محکمہ خزانہ میں پبلک فنانس یونٹ کے قیام کی منظوری کے ساتھ مالی معاملات کی جانچ پڑتال کے لیے قابل ترین سٹاف کی بھرتیوں پر زور دیا گیا۔ شہر خاموشاں اتھارٹی کے قیام کے حوالے سے حتمی فیصلے کے لیے چیئرمین پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ کو پابند کیا گیا کہ وہ آ ئند ہ اجلاس میں اتھارٹی کے قیام کے جواز اور انتظامی امور کی انجام دہی کے لیے متعلقہ اداروں کی ذمہ داریوں کی نشاندھی کریں۔

محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کے تحت اینٹی نارکوٹکس فورس کے قیام اور بھرتیوں کی سفارش مسترد کر دی گئی تاہم اینٹی نارکوٹکس یونٹ کی ضرورت اور اہمیت کو تسلیم کرتے ہوئے متبادل ماڈل کی ہدایت کی گئی۔ جنوبی پنجاب سول سیکریٹریٹ میں منتقل ہونے والے افسران اور ملازمین کے لیے خصوصی الاؤنس کی سفارش کی منظوری دیتے ہوئے پہلے سے ایگزیکٹو الاونس وصول کرنے والے افسران کے لیے بنیادی تنخواہ کا 75فیصد جبکہ دیگر ملازمین کے لیے 100فیصد الاؤنس کی منظور دی گئی۔ ڈاکٹر سلمان شاہ نے شہر خاموشاں کے معاملات کو خالصتاً مقامی حکومتوں کا وظیفہ ا ور اینٹی نارکوٹکس فورس سے متعلق  سرگرمیوں کو پولیس کی ذمہ داری قرار دیا۔ اس حوالے سے اینٹی ٹیررازم فورس کی خدمات لینے کی تجویز بھی پیش کی گئی۔ آ خر میں ڈاکٹر اختر ملک اور سیکرٹری انرجی نے کمیٹی کو محکمہ توانائی کی کاکردگی اور وفاق کے ساتھ ٹیرف کے معاملات پر تفصیلی بریفنگ دی-