مساجد اور منبر سے وباء کے خلاف جہاد جاری رہے گا

کورونا وائرس کی روک تھام کے لئے ایس او پیز پر عملدرآمد کے سلسلے میں حکومت کو علماء کرام کا تعاون اور مشاورت درکار ہے

مساجد اور منبر سے وباء کے خلاف جہاد جاری رہے گا

لاہور :صوبائی وزیر اوقاف صاحبزادہ سید سعید الحسن نے علماء کرام سے ملاقات میں کہا ہے کہ مساجد اور منبر سے وباء کے خلاف جہاد جاری رہے گا۔ کورونا وائرس کی روک تھام کے لئے ایس او پیز پر عملدرآمد کے سلسلے میں حکومت کو علماء کرام کا تعاون اور مشاورت درکار ہے۔ انہوں نے کہا کہ وباء کی پہلی لہر کے دوران علماء کی رہنمائی اور تعاون کی بدولت وائرس پر قابو پانے میں مدد ملی۔انہوں نے کہا کہ لوگوں کی جانب سے ایس او پیز پر عملدرآمد کرنے کی وجہ سے کورونا وائرس دوبارہ پھیل رہا ہے۔

علماء کرام عوام کو معاملے کی سنگینی سے آگاہ کرنے کے لئے اپنا کردار ادا کریں۔انہوں نے کہا کہ ہمارے معاشرے میں مسجد اور منبر کی بہت اہمیت ہے اور لوگ علماء کرام کی بات پر یقین اور عمل کرتے ہیں۔ دین اسلام انسانی جان کے تحفظ کو اولین ترجیح دیتا ہے۔ علماء کرام مساجد میں عبادات کے دوران ایس او پیز پر عملدرآمد کیساتھ ساتھ لوگوں میں سماجی فاصلہ اور ماسک کے استعمال سے متعلق آگاہی بڑھائیں۔انہوں نے کہا کہ وباء کی دوسری لہر پرقابو پانے کا واحد حل ماسک پہننا،سماجی فاصلہ برقرار رکھنا اور اسلام کی جانب سے فراہم کردہ رہنمااصولوں پر عمل کرنا ہے۔ حکومت نے کورونا وائرس کی روک تھام کے لئے ایس او پیز پر عملدرآمد کے سلسلے میں ہدایت کی ہے کہ صوبائی حکومت کورونا وباء کی دوسری لہر کے دوران کاروبار اور معیشت کو احتیاطی تدابیر کے ساتھ رواں رکھنے کے لئے اقدامات کر رہی ہے ۔

تاہم لوگوں کی صحت اور زندگیوں کے تحفظ کے معاملے پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جاسکتا۔ انہوں نے کہا کہ وباء کے پھیلاؤ کو دیکھتے ہوئے اگلے دو ماہ نہایت اہم ہیں،میرج ہال مالکان ذمہ داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے اوپن ائیر شادی تقریبات میں ماسک کی پابندی،سماجی فاصلہ اور دیگر ایس او پیز پر عملدرآمد یقینی بنائیں۔انہوں نے کہا کہ حکومت مخصوص مقرر کردہ ڈیزائن کے ہوئے،آمدورفت کے مناسب انتظام والے میرج ہالز اور مارکیز میں شادی کی تقریبات کی اجازت دینے کے لئے سفارشات تیار کرے گی۔