سول، پولیس افسران عوام کو ریلیف کی فراہمی کے حکومتی ایجنڈا پر عملدرآمد کیلئے کام کریں۔ چیف سیکرٹری پنجاب جواد رفیق ملک

 کسی کو ٹرانسفر نہیں کیا جائے گا لیکن نا قص کارکردگی،اختیارات کا ناجائز استعمال اور کرپشن برداشت نہیں، اجلاس سے خطاب

سول، پولیس افسران عوام کو ریلیف کی فراہمی کے حکومتی ایجنڈا پر عملدرآمد کیلئے کام کریں۔ چیف سیکرٹری پنجاب جواد رفیق ملک

تمام سول اور پولیس افسران حکومتی ایجنڈے پر عملدر آمد کیلئے جنگی بنیادوں پر کام کریں تاکہ کورونا وائرس کیساتھ ساتھ ڈینگی، ذخیرہ اندوزی، گرانفروشی، عوام کو تحفظ کی فراہمی اور دیگر درپیش چیلنجز کا مقابلہ کر کے عوام کو ریلیف فراہم کیا جا سکے۔ چیف سیکرٹری پنجاب جواد رفیق ملک نے ان خیالات کا اظہار سول سیکرٹریٹ میں انتظامی افسران کے اجلاس کے دوران پالیسی گائیڈلائن دیتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں سینئر ممبر برڈ آف ریونیو بابر حیات تارڑ، ایڈیشنل چیف سیکرٹری شوکت علی، ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ مومن آغا، کمشنر لاہور ڈویژن سیف انجم اور مختلف محکموں کے ایڈمنسٹریٹو سیکرٹریز نے شرکت کی جبکہ ڈویژنل کمشنرز اور ڈپٹی کمشنرز ویڈیو لنک کے ذریعے شریک ہوئے۔

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے چیف سیکرٹری نے کہا کہ تمام افسران صر ف اور صرف کارکردگی پر فوکس کریں، پروفیشنل افسران کو ٹرانسفر کا خوف بالائے طاق رکھنا ہوگا لیکن ناقص کارکردگی، اختیارات کا نا جائز استعمال، مس کنڈکٹ اور کرپشن کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی اور ان میں ملوث افسران کو عہدوں سے ہٹا دیا جائے گا۔ چیف سیکرٹری نے کہا کہ اس سال کورونا وائرس کے باعث عوام کو رمضان بازاروں کی سہوت فراہم نہیں کی جا سکی اس لئے اشیاء ضروریہ کی قیمتوں میں استحکام پر خصوصی توجہ دی جائے۔ انہوں نے کہا کہ پرائس کنٹرول کے حوالے سے تمام اقدامات کی نگرانی میں خود کروں گا۔  انہوں نے سیکرٹری انڈسٹریز کو ہدایت کی کہ کل سے سول سیکرٹریٹ میں پرائس کنٹرول سیل قائم کر دیا جائے جہاں کمشنرز اور ڈپٹی کمشنرز اشیاء کے نرخوں، گرانفروشی اور ذخیرہ اندوزی کیخلاف کارروائی سے متعلق روزانہ کی بنیاد پررپورٹ بھجوائیں۔ انہوں نے افسران کو حکم دیا کہ دکانوں پر نرخنامے لازمی آویزاں کروائیں اور جو دکاندار عمل نہ کرے اسکی دکان کو سیل کر دیا جائے۔

اجلاس میں کورونا وائرس کی صورتحال کے ساتھ ساتھ خریف کی فصل کو ٹڈی دل سے بچانے کیلئے کئے جانیوالے اقدامات کا بھی تفصیلی جائزہ لیا گیا۔ سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو نے چیف سیکرٹری کو بتایا کہ بارہ اضلاع  بہاولپور، ڈی جی خان، لیہ، اٹک، جھنگ، راجن پور، خوشاب  بھکر، پاکپتن، اوکاڑہ، ساہیوال اور بہاولنگر میں لوکسٹ کامبیٹ پروگرام جاری ہے اور اب تک 5808آپریشنز کئے جا چکے ہیں۔ انہوں نے مزید بتایا کہ 3775سرویلنس آپریشنز میں 392سپرے ٹیمیں حصہ لے رہی ہیں اور اس مقصد کیلئے پورٹیبل سپرے گنز، ٹریکٹرز اور دیگر گاڑیاں استعمال کی جا رہی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ ٹڈی دل کے خاتمے کیلئے آپریشن میں پاکستان آرمی کے ماہرین کی مدد بھی لی جا رہی ہے۔

چیف سیکرٹری نے کہا کہ عوام کا ڈینگی اور کورونا وائرس جیسی مہلک بیماریوں سے تحفظ حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ انہوں نے محکمہ صحت کے سیکرٹریز کو ہدایت کی کہ گذشتہ برس کے تجربے کو مدنظر رکھتے ہوئے صوبے میں ڈینگی کے خطرے سے نمٹنے کیلئے مربوط لائحہ عمل تیار کیا جائے اور انہیں صورتحال سے روزانہ کی بنیاد پر آگاہ کیا جائے۔