وزیر تعلیم پنجاب ڈاکٹر مراد راس کا قائد ہیڈکوارٹرز وحدت روڈ لاہور میں آن لائن ریٹائرمنٹ سسٹم برائے اساتذہ کا افتتاح

اساتذہ کی زندگیاں آسان کرنے پر پہلے دن سے کام کر ریے ہیں اور یہ ٹیکنالوجی کے بھرپور اور جامع استعمال کے بغیر ممکن نہیں آج اساتذہ کے لئے جس آن لائن سسٹم کا آغاز کر رہے ہیں اس کی مثال ماضی میں کہیں نہیں ملتی

 وزیر تعلیم پنجاب ڈاکٹر مراد راس کا قائد ہیڈکوارٹرز وحدت روڈ لاہور میں آن لائن ریٹائرمنٹ سسٹم برائے اساتذہ کا افتتاح

لاہور : وزیر تعلیم پنجاب ڈاکٹر مراد راس کا قائد ہیڈکوارٹرز وحدت روڈ لاہور میں آن لائن ریٹائرمنٹ سسٹم برائے اساتذہ کا افتتاح کرتے ہوئے کہنا تھا کہ اساتذہ کی زندگیاں آسان کرنے پر پہلے دن سے کام کر ریے ہیں اور یہ ٹیکنالوجی کے بھرپور اور جامع استعمال کے بغیر ممکن نہیں۔ آج اساتذہ کے لئے جس آن لائن سسٹم کا آغاز کر رہے ہیں اس کی مثال ماضی میں کہیں نہیں ملتی۔ صوبائی وزیر تعلیم نے کہا کہ بڑھاپے میں لوگ اپنی ریٹائرمنٹ کا وقت قریب آتے دیکھ کر سسٹم کی پیچیدگیوں کی بدولت گھبرایا کرتے تھے مگر اب ان کا ریٹائرمنٹ نوٹیفیکیشن اس قائم کردہ آن لائن سسٹم کی بدولت ان کو بغیر کسی اذیت سے گزرے گھر بیٹھے ملے گا۔

ڈاکٹر مراد راس نے کہا لوگوں کے لئے آسانیاں پیدا کرنا ہماری حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ ہم نے اساتذہ کو پڑھانے کے لئے بھرتی کیا اور انہیں ناقص سسٹم کی بدولت مختلف قسم کی مشکلات میں الجھائے رکھا۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ ریٹائرمنٹ کا مکمل نظام آن لائن ہونے سے بدعنوانی کے عنصر کا بڑے پیمانے پر خاتمہ ہو گا۔ ڈاکٹر مراد راس کا کہنا تھا کہ ماضی کی حکومتوں کی جانب سے دانستہ طور پر ٹیکنالوجی کے استعمال کو نظرانداز کیا گیا کیونکہ ٹیکنالوجی کا استعمال شفافیت لاتا ہے اور یہ ماضی کی حکومتوں کو قطعاً گوارا نہ تھا۔ ہماری پوری کوشش ہے کہ وزیر اعظم عمران خان کے ڈیجیٹل پاکستان کے ویژن کے مطابق اپنے اس حکومت کے دورانیہ میں سکول ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ پنجاب کے زیادہ سے زیادہ معاملات کو ڈیجیٹائز کیا جائے گا تاکہ لوگوں کے لئے آسانیاں اور ہر پیمانے پر شفافیت کو یقینی بنایا جا سکے۔

       سکول ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ پنجاب کی سال 2020 کی کارکردگی کے حوالے بات کرتے ہوئے ڈاکٹر مراد راس کا کہنا تھا کہ رواں سال تبادلوں کے لئے تیار کئے جانے والے ای ٹرانسفر سسٹم پر 99526 اساتذہ کے تبادلوں کی درخواستیں موصول ہوئیں اور ان میں سے 55838 کے اس آن لائن سسٹم کے تحت تبادلے ہوئے۔ انہوں نے کہا کہ پانچویں جماعت کے بورڈ امتحانات کو معطل کر کے بہترین اسیسمنٹ پالیسی لائی جا رہی ہے اور حال ہی میں نجی سکولوں کی آن لائن رجسٹریشن کے لئے متعارف کرائے جانے والے رجسٹریشن سسٹم کے تحت اب تک 31864 نجی سکول آن لائن رجسٹر ہو چکے ہیں جو کہ خوش آئند بات ہے۔ جب آپ لوگوں کے لئے آسانیاں پیدا کریں تو لوگ خود سسٹم کے مطابق کام کرتے ہیں۔ ڈاکٹر مراد راس نے مزید بتایا کہ رواں سال صوبے بھر کے 1227 سکولوں کو بغیر کسی اضافی خرچ کے اپگریڈ کیا گیا جس کی بدولت ایک لاکھ سے زائد طلبا سکولوں میں واپس آئے۔  

کرونا وائرس کے بحران میں طلبا کے تعلیمی خرج کو کم سے کم کرنے کے لیے آن لائن چینل تعلیم گھر اور ویب سائٹ کا قیام عمل میں لایا گیا جس سے لاکھوں کی تعداد میں طلباء مستفید ہوئے اور نجی اکیڈمی کلچر کے خاتمے اور والدین کی آسانی کے لئے انصاف اکیڈمی کے منصوبے پر کام جاری ہے جو بہت جلد مکمل کر لیا جائے گا. ڈاکٹر مراد راس نے یہ بھی کہا کہ سنگل نیشنل کریکولم کو حال ہی میں پنجاب کابینہ کی جانب سے منظور کیا گیا ہے اور اس پر عملدرآمد کے حوالے سے سکول ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کی تیاریاں ختمی مراحل میں ہیں. آخر میں وزیر تعلیم پنجاب ڈاکٹر مراد راس کا کہنا تھا کہ موجودہ حالات کو دیکھتے ہوئے سکول کھولنے کا فیصلہ 10 جنوری سے آگے لے جایا جا سکتا ہے لیکن اس کے لئے اس بات کو یقینی بنانا ضروری ہے کہ بچے سکول کی طرح عوامی اجتماعات کی جہگوں سے بھی مکمل طور پر دور رہیں۔