پنجاب میں گرانفروشوں، ذخیرہ اندوزوں، ملاوٹ مافیا کیخلاف کریک ڈاؤن جاری،تین ماہ میں 2456افرادگرفتار  

 20ہزار بوری چینی،  302بوری چاول، 3130بوری گندم، 3629آٹے کے تھیلے اور35ہزار کلوگرام ذخیرہ کیا گیا گھی برآمد

پنجاب میں گرانفروشوں، ذخیرہ اندوزوں، ملاوٹ مافیا کیخلاف کریک ڈاؤن جاری،تین ماہ میں 2456افرادگرفتار  

لاہور: وزیر اعظم کی خصوصی ہدایت پر صوبے میں گرانفروشوں، ذخیرہ اندوزوں اور اشیاء خورونوش میں ملاوٹ کرنے والوں کیخلاف کریک ڈاؤن بھرپور انداز میں جاری ہے اور گزشتہ تین ماہ میں مختلف شہروں میں گرانفروشی پر 2456افرادکو گرفتار، 2523مقدمات کا اندراج اور تقریبا12کروڑ 84لاکھ روپے کے جرمانے عائد کئے گئے۔  چیف سیکرٹری پنجاب کی زیر صدارت سول سیکرٹریٹ میں منعقد اجلاس میں پیش کی جانیوالی رپورٹ کے مطابق ذخیرہ اندوزوں کیخلاف کارروائیوں  کے دوران 20ہزار بوری چینی،  302بوری چاول، 3130بوری گندم، 3629آٹے کے تھیلے اور35ہزار کلوگرام ذخیرہ  شدہ گھی برآمد کیا گیا۔

اسی طرح پنجاب فوڈ اتھارٹی نے ملاوٹ مافیا کے خلاف کریک ڈاؤن میں گزشتہ تین ماہ کے دوران 3118یونٹس سیل، 148مقدمات کا اندراج اور تقریبا 15کروڑ روپے کے جرمانے عائد کرنے کیساتھ ساتھ سات ہزار کلوگرام مضر صحت گوشت، 14لاکھ لیٹر دودھ، 13 سوکلوگرام مصالحہ جات،23سو کلو گرام دالیں، 10ہزار کلو گرام گھی اور 34سو لیٹر پانی تلف کیا۔  اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے چیف سیکرٹری نے کہا کہ وزیر اعظم اور وزیر اعلیٰ پنجاب کی ہدایت کے مطابق  اشیاء ضروریہ کے نرخوں، طلب اور رسد کی کڑی نگرانی کی جا رہی ہے اورسہولت بازاروں کے قیام سمیت دیگرحکومتی اقدامات کے باعث عام آدمی کو ریلیف ملا ہے۔

انہوں نے افسران کو ہدایت کی کہ ذخیرہ اندوزوں، گرانفروشوں اور ملاوٹ مافیا سے آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے اور اشیاء ضروریہ کی قیمتوں کیساتھ ساتھ معیار اور رسد پر بھی کڑی نظر رکھی جائے۔ انہوں نے کہا کہ اشیاء کی طلب اور رسد کو مد نظر رکھتے ہوئے پیشگی منصوبہ بندی از حد ضروری ہے، اس سلسلے میں فورکاسٹنگ کمیٹی فعال انداز میں کام کرے۔ چیف سیکرٹری نے ڈائریکٹر جنرل پنجاب فوڈ اتھارٹی کو ہدایت کی کہ ملاوٹ کیخلاف کریک ڈاؤن کو مزید منظم انداز میں جاری رکھنے کیلئے اقدامات کئے جائیں اور اشیاء کے معیار کے تعین پر خصوی توجہ د جائے۔

انہوں نے کہا کہ اشیاء خورونوش میں ملاوٹ  کے جرم کے مرتکب عناصرلوگوں کی صحت اور زندگیوں سے کھیل رہے ہیں، ایسے عناصر کسی رعائیت کے مستحق نہیں۔ انہوں نے ڈپٹی کمشنرز کو ہر سہولت بازار سے استفادہ کرنے والے صارفین کی تعداد سے متعلق جامع رپورٹ بھجوانے سے متعلق بھی ہدایات جاری کیں۔

سیکرٹر ی صنعت نے اجلاس کواشیاء خورونوش بشمول آٹا، چینی، سبزیوں، گھی اور انڈوں کی قیمتوں کے رجحان اور دستیابی بارے تفصیلی بریفنگ دی۔ایڈیشنل چیف سیکرٹری، خوراک اورزراعت کے محکموں کے ایڈمنسٹریٹو سیکرٹریز، سی ای او اربن یونٹ، ڈی جی پنجاب فوڈ اتھارٹی، ڈائریکٹر فوڈ پنجاب، ڈپٹی کمشنر لاہور اور متعلقہ افسران نے اجلاس میں شرکت کی جبکہ ڈپٹی کمشنرز ویڈیو لنک کے ذریعے شریک ہوئے۔