وزیر داخلہ اعجاز شاہ کے بھائی کے انتقال پر لاہور پریس کلب میں تعزیتی اجلاس

درویش صفت پپو شاہ اپنی ذات میں ادارہ تھے ، زاہد شفیق ، صحافیوں کا اظہار افسوس ،فاتحہ خوانی ، پپو شاہ کا خلا پورا نہ ہوگا ، فلاحی کا م انسان دوستی کی بڑی مثال ہیں، سینئر نائب صدررائے حسنین

وزیر داخلہ اعجاز شاہ کے بھائی کے انتقال پر لاہور پریس کلب میں تعزیتی اجلاس

لاہور : وفاقی وزیر داخلہ بر گیڈئر اعجاز احمد شاہ کے بھائی پیر حسن احمدکے انتقال پرتعزیت کےلئے پریس کلب لاہو ر میں متحدہ اپوزیشن کا تعزیتی اجلاس ، درجنوں صحافیوں کا اظہار افسوس ،دعائے مغفرت کروائی گئی ۔ تفصیلات کے مطابق وزیر داخلہ کے بھائی پیر حسن احمد شاہ طویل عرصہ سے علیل تھے گذشتہ روز انتقال کر گئے ۔انسانیت کی خدمت سے سرشار پپو شاہ ضلع ننکانہ صاحب کی معروف سیاسی شخصیت تھے اورعلاقہ میں بڑے تمام بڑے ترقیاتی منصوبوں کے روح رواں تھے ان کے پسماند گان میں ایک بیٹا پیر سروراحمد شاہ ہے جو ننکانہ صاحب پی ٹی آئی کے صدر ہیں ۔

متحدہ اپوزیشن اجلاس میںرائے حسنین طاہرسینئر نائب صدر پریس کلب لاہور نے کہا کہ ضلع ننکانہ میں پیر حسن پپو شاہ کا خلا کبھی پورا نہیں ہوگا ان کے فلاحی کا م انسان دوستی کی بڑی مثال ہیں ،امجد فاروق کلو ممبر گورننگ باڈی پریس کلب لاہور نے کہا کہ رب کائنات پیر حسن احمد پپو شاہ کو جنت میں اعلی مقام دے انہوںنے ننکانہ میں سکھ کمیونٹی کےلئے بڑا کام کیا ،رائٹرز گروپ کے چیئرمین زاہد شفیق طیب نے کہا کہ درویشانہ زندگی کے قائل پیر پپو شاہ اپنی ذات میں ایک ادارہ تھے ، ورکرز گروپ کے سربراہ احسن ضیاءنے کہا کہ عام بندوں کےلئے فلاحی کام کرنیوالے ہمیشہ تاریخ میں زندہ رہتے پیر حسن احمد پیو شاہ بھی ان کی شخصیات میں سے ایک تھے۔

 ملک وسیم شاہد سابق صدرپنجاب یونین آف جرنلسٹ نے کہا کہ پیر پپو شاہ جیسے لوگ صدیوں بعد پیدا ہوتے ، اللہ تعالی ان کے لواحقین کو یہ صدمہ برداشت کرنیکی ہمت دے ، شیر افضل بٹ ترجمان متحدہ اپوزیشن کا کہنا تھا کہ پیر حسن احمد پپو شاہ دوستی کا ایسا شجر تھے جنہوںنے اپنوں کو نہیں بیگانوں کو بھی سایہ دیا ننکانہ کی دھرتی ایک دلیر ، درویشن صفت انسان سے محروم ہوگئی ، اجلاس کے اختتام پر شرکاءنے پیر حسن احمد شاہ کی دعائے مغفرت کےلئے خصوصی دعا کی اوررب کائنات سے التجا کی کہ وہ ان کو جنت الفردوس کے اعلی مقام میں داخل کریں