مشیر سیاحت کا دورہ شالامار باغ، ٹورسٹس انفارمیشن سنٹر اور فوٹو سٹوڈیو کا معائنہ

 پنجاب بالخصوص لاہور کے تاریخی مقامات میں سیاحوں کیلئے کشش کا وسیع سکوپ موجود ہے کورونا کے خطرات کم ہوتے ہی سیاحتی مقامات کھول دیے جائیں گے، مشیر وزیراعلیٰ آصف محمود

مشیر سیاحت کا دورہ شالامار باغ، ٹورسٹس انفارمیشن سنٹر اور فوٹو سٹوڈیو کا معائنہ

لاہور : مشیر وزیراعلیٰ پنجاب برائے سیاحت آصف محمود نے تاریخی شالامار باغ کا دورہ کرکے ٹورسٹس انفارمیشن سنٹر اور رائل فوٹو سٹوڈیو کا معائنہ کیا۔ ٹورازم ڈویلپمنٹ کارپوریشن پنجاب (ٹی ڈی سی پی) کے منیجنگ ڈائریکٹر تنویر جبار اور ڈائریکٹر آرکیالوجی ملک مقصود احمد نے انہیں بریفنگ دی۔ مشیر وزیراعلیٰ نے ٹی ڈی سی پی کی طرف سے مغلیہ دور کے شاہکار شالامار باغ میں سوونئیر شاپ کا بھی دورہ کیا۔ مشیر وزیراعلیٰ نے تاریخی آچار قدیمہ کو سیاحتی مقامات میں تبدیل کرنے کے منصوبے کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ پنجاب بالخصوص لاہور کے تاریخی مقامات میں سیاحوں کیلئے کشش کا وسیع سکوپ موجود ہے۔

وزیراعظم عمران خان اور وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار سیاحت کا دیرپا فروغ چاہتے ہیں۔ اسی تناظر میں سیاحوں کو زیادہ سے زیادہ سہولتوں کی فراہمی اور سیاحت کو انڈسٹری کی شکل دینے کیلئے اقدامات کر رہے ہیں۔ آصف محمود نے اس امید کا اظہار کیا کہ کورونا کے خطرات کم ہوتے ہی سیاحتی مقامات کھول دیے جائیں گے۔ حکومت کو اس حوالے سے عوام میں پائی جانے والی بے چینی کا احساس ہے لیکن محض تفریح کے لئے کسی کی جان خطرے میں نہیں ڈال سکتے۔

مشیر وزیراعلیٰ نے کہا کہ شالامار باغ میں سیاحت کیلئے زبردست پوٹینشل موجود ہے۔ ٹی ڈی سی پی انفارمیشن سنٹر میں سیاحوں کو مکمل معلومات فراہم کی جائیں گی۔ ٹی ڈی سی پی کے ایم ڈی تنویر جبار نے بتایا کہ شاہی فوٹو سٹوڈیو میں مغلیہ بادشاہوں کا لباس رکھا گیا ہے۔ سیاح مغلیہ دربار کے پس منظر کے ساتھ تصاویر بنوا سکیں گے۔ ڈائریکٹر آرکیالوجی ملک مقصود احمد نے بتایا کہ شالامار باغ سمیت تاریخی مقامات کی دیکھ بھال اور مرمت یقینی بنا رہے ہیں۔