وفاقی وزیر برائے قومی غذائی تحفظ و تحقیق سید فخر امام سے پاکستان میں یورپی یونین کی سفیر اندرولا کمنارا کی ملاقات

وفاقی وزیر برائے قومی غذائی تحفظ و تحقیق سید فخر امام سے پاکستان میں یورپی یونین کی سفیر اندرولا کمنارا کی ملاقات

اسلام آباد۔:پاکستان میں یورپی یونین کی سفیر اندرولا کمنارا نے کو وفاقی وزیر برائے قومی غذائی تحفظ و تحقیق سید فخر امام سے ان کے دفتر میں ملاقات کی۔وفاقی وزیر نے سفیر کا خیرمقدم کیا اور یورپی یونین (EU) کی دنیا کے ایک سرکردہ خطے کی حیثیت کی تعریف کی۔

انہوں نے کہا کہ یورپی یونین کے پاس دنیا کی آبادی کا صرف 5.8 فیصد ہے اور اس کے باوجود وہ عالمی جی ڈی پی کا 18 فیصد پیدا کرتے ہیں جو کہ 2021 میں 17 ٹریلین امریکی ڈالر ہے۔ پاکستان کو زراعت کی جدت اور زرعی مصنوعات کی ویلیو ایڈیشن میں یورپی یونین کے تجربات سے استفادہ کرنے کی ضرورت ہے۔

فخر امام نے 250 ملین امریکی ڈالر کے یورپی یونین کے ترقیاتی پروگرام کا خیرمقدم کیا جس کا مقصد بنیادی طور پر پاکستان کے زرعی شعبے کی ترقی پر توجہ مرکوز کرنا ہے لیکن اس کا مقصد باغبانی، پانی کے تحفظ اور ہائیڈرو پاور جنریشن، لائیو سٹاک کی ترقی اور انسانی وسائل کی ترقی تھرپارکر اور عمرکوٹ جیسے دیہی علاقوں کے بچوں بالخصوص خواتین کے لیے بنیادی صحت کی سہولیات تک محدود نہیں ہے۔

وفاقی وزریر نے کہا کہ کسانوں کے کام کے ماحول میں وسعت کے لیے ایک جامع نقطہ نظر کی ضرورت ہے۔پاکستان میں یورپی یونین کی سفیر اندرولا کمنارا نے کہا کہ یورپی یونین پاکستان کے دیہی علاقوں میں کسانوں کی انسانی ترقی کو بڑھانے کے ساتھ ساتھ زرعی شعبے کو اپ گریڈ کرنے کے لیے پاکستان کے ساتھ تعاون کرنے کی خواہشمند ہے۔

سفیر نے کہا کہ یورپی یونین پہلے ہی پاکستان میں زراعت اور لائیو سٹاک کے تحقیقی نظام کو اپ گریڈ کرنے میں سرمایہ کاری کر رہی ہے لیکن وہ وزارت قومی غذائی تحفظ اور تحقیق کے ساتھ مل کر اپنا دائرہ کار بڑھانا چاہتی ہے۔