وزیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار کی ہدایات پر صوبائی وزیر پبلک پراسکیوشن چودھری ظہیر الدین نے اسسٹنٹ کمشنر آفس جڑانوالہ میں کھلی کچہری

دفاتر میں موجود رہ کر عوامی خدمت کو شعار بنائیں اور سائلین سے خندہ پیشانی سے پیش آتے ہوئے ان کے مسائل کو حل کریں:وزیراعلی پنجاب

وزیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار کی ہدایات پر صوبائی وزیر پبلک پراسکیوشن چودھری ظہیر الدین نے اسسٹنٹ کمشنر آفس جڑانوالہ میں کھلی کچہری

لاہور: وزیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار کی ہدایات پر صوبائی وزیر پبلک پراسکیوشن چودھری ظہیر الدین نے اسسٹنٹ کمشنر آفس جڑانوالہ میں کھلی کچہری لگا کر مختلف محکموں / اداروں سے متعلقہ عوامی شکایات و مسائل سنے اور موقع پر ہی افسران کو تیزرفتار اقدامات کرکے عوام کو ریلیف فراہم کرنے کی تاکید کی۔ ڈپٹی کمشنر محمد علی، قائم مقام سی پی او کاشف اسلم، اسسٹنٹ کمشنر جڑانوالہ زین العابدین، ایس پی ناصر محمود باجوہ، تحصیل انتظامیہ اور پولیس افسران بھی موجود تھے۔

وزیر پبلک پراسیکیوشن نے شہریوں کے محکمہ مال، ایجوکیشن، میونسپل کمیٹی، پولیس اور دیگر محکموں سے متعلقہ مسائل سنے۔ چودھری ظہیر الدین نے کہا کہ وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی ہدایات پر کھلی کچہری لگا کر عوامی مسائل ان کی دہلیز پر سنیاور حل کے لئے موثر اور تیز رفتار اقدامات کئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ عوام سے قریبی رابطہ استوار کیا جا رہا ہے اور ان کے جائز مسائل کے حل میں کوئی کسر اٹھا نہیں رکھی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ کھلی کچہریوں کے انعقاد کا سلسلہ باقاعدگی سے جاری رہے گا اور عوامی مسائل کے حل میں لیت ولعل دکھانیوالے افسروں کے خلاف کارروائی ہوگی۔

صوبائی وزیر نے افسران سے کہا کہ وہ دفاتر میں موجود رہ کر عوامی خدمت کو شعار بنائیں اور سائلین سے خندہ پیشانی سے پیش آتے ہوئے ان کے مسائل کو حل کریں۔ انہوں نے کہا کہ بد دیانت اور کام چور اور ملازمین اپنا قبلہ درست کرلیں اور عوامی خدمت کو اپنا شعار بنائیں۔ ڈپٹی کمشنر محمد علی نے کہا کہ عوامی مسائل کا حل ترجیح ہے جس میں زیروٹالرنس پالیسی اپنائی جائے۔انہوں نے صوبائی وزیر کو انسداد سموگ،سہولت بازاروں کے قیام، مہنگائی مافیا کے خلاف کارروائیوں اور تجاوزات کے خلاف آپریشن سے آگاہ کیا۔ انہوں نے اسسٹنٹ کمشنر سے کہا کہ کھلی کچہری میں پیش کی جانے والی عوامی شکایات کو تیز رفتاری سے حل کرکے عوام کو ریلیف فراہم کریں۔ انہوں نے کہا کہ عوامی مسائل سے روگردانی کرنے والے افسران کو نتائج بھگتنا پڑیں گے۔قائم مقام سی پی او نے پرائس کنٹرول میں دائر استغاثوں پر مقدمات درج کرانے کے لئے ایس پی کو فوری اقدامات کرنے کی تاکید کی۔