شاہین شاہ آفریدی اب بھی مکمل فٹنس پر واپس آنے کی کوشش کر رہے ہیں

شاہین شاہ آفریدی اب بھی مکمل فٹنس پر واپس آنے کی کوشش کر رہے ہیں

پاکستان ٹیم کے مایہ ناز فاسٹ بولر شاہین شاہ آفریدی نے کہا ہے کہ وہ اپنی مکمل فٹنس پر واپس آنے کی بھرپور کوشش کر رہے ہیں لیکن میچ فٹنس بالکل مختلف ہوتی ہے۔

ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں پہلی فتح کے بعد کرک انفو کو انٹرویو میں شاہین شاہ آفریدی نے کہا کہ انجری سے چھٹکارا حاصل کرنے کے تین ماہ بعد واپس آکر فوری طور پر اپنی پوری قوت کا مظاہرہ کرنا مشکل ہوتا ہے۔

ورلڈ کپ کے ابتدائی دو میچز میں قومی فاسٹ بولر کوئی وکٹ حاصل کرنے میں کامیاب نہیں ہو سکے تھے جبکہ انہوں نے رنز بھی زیادہ دیے تھے۔ نیدرلینڈز کے خلاف تیسرے میچ میں وکٹ حاصل کرنے میں کامیاب ہوئے۔

انہوں نے کہا کہ گھٹنے کی انجری سے چھٹکارا حاصل کرکے تین ماہ بعد واپس آنا آسان نہیں اور اللہ نہ کرے کہ کوئی کھلاڑی اس طرح کی انجری کا شکار ہو لیکن جو کھلاڑی اس انجری کا شکار ہوتے ہیں وہ یقیناً جانتے ہیں کہ یہ کتنا مشکل ہوتا ہے۔

شاہین شاہ آفریدی نے واضح کیا کہ میچ کے دوران اپنی 100 فیصد کارکردگی دکھانے کی کوشش کر رہا ہوں اور میرے خیال سے میرا بولنگ پیس پہلا جیسا ہی ہے کیونکہ میری اوسط رفتار تقریباً 135-140 کلومیٹر فی گھنٹہ تھی۔